تازہ ترینعلاقائی

چونیاں:بینظیربھٹو کو بچھڑے 9برس ہو گئے مگر ان کا غم آج بھی پہلے کی طرح تازہ ہے۔افضل شاہین

چونیاں (نامہ نگار) بینظیربھٹو کو بچھڑے 9برس ہو گئے مگر ان کا غم آج بھی پہلے کی طرح تازہ ہے۔ ذوطن عزیز کو ناقابل شکست بنانے کیلئے ایٹمی و میزائل پروگرام بھٹو خاندان کا عظیم کارنامہ ہے ۔نسل نو کو ان عظیم قربانیوں سے سبق حاصل کرنے کی ضرورت ہے۔بے مثال جدوجہد اور قربانی نے بینظیربھٹو کو جمہوریت کی علامت بنا دیا۔دہشت گردی سے نجات بینظیربھٹو کا مشن ہے۔ محترمہ نے دہشت گردوں کے سامنے ڈٹ جانے کی لازوال مثال قائم کی۔ان خیالات کا اظہار محمد افضل شاہین ، نے بینظیر بھٹو کی شہادت کی نویں برسی پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ اسلامی دنیا کو ایک پلیٹ فارم پر اکٹھا کرنے اورعوام کے حقوق کیلئے بھٹو خاندان کی لازوال قربانیاں ہیں۔بینظیر بھٹو نے اپنے عمل سے ثابت کر دکھایا کہ وہ ایک بہادر باپ کی بیٹی ہیں۔بینظیربھٹو اپنے والد کی طرح ایک نڈر سیاست دان تھیں۔ جس بہادری سے قائد عوام ذوالفقار علی بھٹو نے موت کوگلے لگایا اور اصولوں پر سمجھوتہ نہ کیا۔اسی طرح عظیم باپ کی عظیم بیٹی نے بھی اصولوں کی سیاست کی اور بہادری سے لڑتے ہوئے موت کو گلے لگا لیا۔54 سالہ زندگی میں24 سال ملک و قوم کی ترقی اور جدوجہد میں گزارے۔والفقار علی بھٹو نے ملک کو ایٹمی طاقت بنانے کی پاداش میں جان دے دی اگر آج بھٹو زندہ ہوتے تو عالم اسلام آپس میں دست و گریبان نہ ہوتا اور سلامتی کونسل میں مسلمانوں کے پاس ویٹو پاور ہوتی۔ دنیا کی نام نہاد عالمی طاقتوں کو بھٹو کا اسلامی کانفرنس کی تنظیم اور اسلامی بلاک بناناکسی صورت ہضم نہیں ہو رہا تھا۔پاکستان دشمن قوتوں کو بے نظیر بھٹو کا دلیرانہ انداز اور پاکستان کیلئے کچھ کرنے کی سوچ برداشت نہ ہو سکی اور عالمی قوتیں بھٹو کی طرح اسکی جان کی دشمن ہو گئیں۔محترمہ کی کوششوں سے ملک میں ایک بار پھر جمہوری نظام بحال ہوا جو آج تک جاری و ساری ہے۔ جمہوریت کی بنیادوں میں محترمہ کا خون شامل ہے۔آج جب حکومت دہشت گردوں کا قلع قمع کرنے کیلئے تیار ہے ۔ تمام عسکری و سیاسی قیادت ایک پیج پر ہے تو حکومت اس موقع پر بی بی شہید کے قاتلوں کو بھی نہ بھولے ۔ دہشت گردی کے خاتمے اور بی بی کے قاتلوں کو انجام تک پہنچانے کا جو کام پیپلزپارٹی کی حکومت نہ کر سکی وہ کام مسلم لیگ (ن)کی حکومت کر کے پاکستانی عوام اور بھٹو کے جیالوں کو شکریہ کا موقع دیں اور نواز شریف کے بینظیر بھٹو کے منہ بولے بھائی ہونے کا حق بھی ادا ہو جائے گا۔حافظ ذیشان احمد،ساجد علی ،حارث بشیر،عمر فاروق،انیس ریاض،حافظ معاذ،مبشر محبوب،ملک حذیفہ اشرف ،رضوان عامر خاں،محمد دلاور،محمد ارسلان،غلام رسول غوری بھی موجود تھے۔

یہ بھی پڑھیں  حالیہ ماہ پٹرول کی قیمتوں میں اضافہ کے خلاف پاکستان پیپلز پارٹی اوکاڑہ بروز اتوار5 نومبر 11بجے پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کریگی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker