تازہ ترینعلاقائی

ڈسکہ:نامزد ملزم نےاغوا ہو نے والی دوشیزہ کےقتل کااقرارکرلیا

daskaڈسکہ(نامہ نگار)پولیس نے سوا تین سال قبل اغوا ہو نے والی دوشیزہ کے ایک نامز دملزم نے دوشیزہ کو اپنے ساتھی کے ہمراہ زیادتی کے بعد قتل کر کے نعش کو حویلی میں دفن کرنے کا اقرار کر لیا ۔بتایا گیا ہے کہ سوہاوہ ڈسکہ کے رہائشی محمد سجاد کی بیٹی 14عائشہ کو 27-03-2010کو ذیشان عرف نومی وغیرہ نے اغوا کر لیا جس کا مقدمہ نمبر284/10تھانہ سٹی ڈسکہ میں درج تھا جس پر پولیس نے نامز دملزمان کو گرفتار کیا بعد میں ان کو چھوڑ دیاگیاگذشتہ روز پولیس نے ملزم ذیشان عرف نومی کو دوبارہ گرفتار کر کے تفتیش کی جس نے دوران تفتیش اقرار کیا کہ اس نے عائشہ کو فون کر کے حویلی میں بلایا جہاں پر فیصل بھی موجود تھافیصل نے عائشہ کے ساتھ زبردستی زیادتی کی عائشہ کے گھر جا کر بتانے پر ملزم فیصل نے کپڑا رکھ کراس کا منہ دبایا جس سے وہ ہلاک ہو گئی ملزم نومی نے بتایا کہ اس کے ہلاک ہو نے پر ہم دونوں نے اسی حویلی کے ایک کمرہ میں گڑھا کھود کر دفن کر دیا تھااس کے بعد مجھے نہیں معلوم کہ نعش یہاں پر ہی دفن ہے کہ نکال کر کہیں اور دفن کر دی گئی ہے ملزم کی نشاندہی پر پولیس کی بھاری نفری کی نگرانی میں اس جگہ کی کھدائی کی جہاں سے بال وغیرہ برآمد ہو ئے ہیں ایس ایچ او تھانہ سٹی ڈسکہ فیاض حسین شیرازی نے صحافیوں کو بتایا کہ مرکزی ملزم فیصل کی گرفتاری کے لیئے چھاپے مارے جا رہے ہیں کھدائی میں ملنے اجزاء و بال ڈی این اے ٹیسٹ کے لئے بھجوادیے گئے ہیں تفتیش جاری ہے مرکزی ملزم کی گرفتاری کے بعدمزید حقائق سامنے آئیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  جماعت اسلامی قوم کے وسیع تر مفاد میں ہر قسم کی قربانی دے گی ۔میاں مقصود احمد

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker