تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیروشہر بھر میں جگہ جگہ عطائیوں کے ڈیرے

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیروشہر بھر میں جگہ جگہ عطائیوں کے ڈیرے،نیم حکیم جعلی کُشتے کھلا کر گُردے فعل کرنے لگے،نیشنل برانڈز کے جعلی شربت بنا کر گرمیوں میں عوام کو لوٹنے کی فیکٹریاں۔تحصیل ہیلتھ آفیسر سب کچھ جاننے کے باوجود خاموش،ڈی سی قصور سمیت وزیر صحت سے نوٹس لینے کا مطالبہ،شہری حلقے۔تفصیلات کے مطابق۔بھائی پھیرو و گردونواح میں عرصہ دراز سے عطائی ڈاکٹر وں نے گلی محلوں میں ڈیرے جماتے ہوئے نہ صرف غریب لوگوں کا ایم بی بی ایس ڈاکٹربن کر علاج کررہے ہیں بلکہ یہ عطائی سینئر سرجن کی طرح لوگوں کا آپریشن کرتے بھی دکھائی دیتے ہیں اور اسی طرح شہر بھر میں جگہ جگہ میٹرنٹی ہوموں کی بھی بھر مار ہے جنہیں انٹرینڈ دایاں اور ایل ایچ وی چلا رہی ہیں اور دوسری جانب نیم حکیم بھی کسی سے کم نہیں وہ بھی جعلی کُشتے تیار کرکے لوگوں کو کھلا کر گُردے فیل کررہے ہیں ۔گرمیاں آتے ہی جگہ جگہ جعلی شربت بنانے کی فیکٹریاں بھی نیشنل برانڈ کے مشہور شربتوں کے جعلی ریپر لگا کر مضر صحت شربت بنائے جا رہے ہیں تاکہ عوام کو لوٹ کر تجوریاں بھری جا سکیں۔مگر یہاں پر حیرت کی بات یہ ہے کہ ان سب کو کوئی پوچھنے والا ہی نہیں ہے جبکہ یہ مافیا ایک عرصہ سے یہ گھناؤناکام کررہا ہے اور میڈیا کی بار بار نشاندہی کے باوجود نہ تو کبھی تحصیل ہیلتھ آفیسر نے کوئی کارروائی کی اور نہ ہی محکمہ صحت کے ٹھیکیداروں نے کوئی نوٹس لیا شہریوں نے صحافیوں سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ جب کوئی مریض عطائیو ںیا انٹرینڈ دائیوں کے ہاتھوں مرجاتا ہے تو تب خانہ پوری کے لیے تحصیل ہیلتھ آفیسر صاحب حرکت میں آتے ہیں اور خانہ پری کرکے چلے جاتے ہیں

یہ بھی پڑھیں  قاضی حسین احمد جراتوں کے پیکر اور عزیمتوں کے کوہ گراں تھے، ڈاکٹر مسعود احمد خان

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker