بین الاقوامیتازہ ترین

عالمی ادارہ انصاف آج کلبھوشن یادیو کیس کی سماعت کرے گا

ہیگ:(ڈیسک نیوز) عالمی عدالت انصاف  آج بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی سزائے موت کے خلاف کیس کی سماعت کریں گی۔ بھارت کی جانب سے عالمی عدالت میں کیس پر نظر ثانی کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔تفصیلات کے مطابق کلبھوش یادیو کو تین مارچ 2016میں پاکستان میں جاسوسی کرنے پر گرفتار کیا گیا تھا اور فوجی عدالت کی جانب سے اسے سزائے موت سنائی گئی تھی ۔بھارتی جاسوس نے اپنے ویڈیو بیان میں کہا کہ مجھے 2013 کے آخر میں را میں شامل کرلیا گیا تب سے میں بطور آفیسر بلوچستان اور کراچی میں امن و امان کی صورتحال بھی خراب کراتا رہا بنیادی طور پر را کے جوائنٹ سیکرٹری انیل کمار گپتا کے ماتحت ہوں اور پاکستان میں موجودگی کے دوران اس سے رابطے میں رہا ہوں۔کلبھوشن کا کہنا تھا کہ بلوچ اسٹوڈنٹ تحریک کو ہینڈل کرنا میرا کام تھا۔میرا مقصد بلوچ باغیوں کے ساتھ مسلسل رابطے رکھنا اور ان کے اشتراک سے کارروائیاں کروانا تھا یہ کارروائیاں مجرمانہ تھیں اور قومی سالمیت کے خلاف تھیں جن کا مقصد پاکستانی شہریوں کو ہلاک کرنا یا نقصان پہنچانا تھا ۔ کلبھوشن کے مطابق تین مارچ 2016کو پاکستانی حکام کے ہاتھوں پاکستان کے علاقے میں گرفتار ہواپاکستان میں داخل ہونے کابنیادی مقصد بلوچ علیحدگی پسندوں کے ساتھ بلوچستان میں کارروائیاں کرنے کے لیے میٹنگ کرنا تھا بھارتی ایجنسیوں کا بنیادی مقصد مستقبل قریب میں بلوچستان میں کچھ بڑی کارروائیاں پلان کرنا تھا  جیسے ہی مجھے پتہ چلا کہ میرا انٹیلی جنس آپریشن ناکام ہوچکا ہے اور میں پاکستانی حکام کی حراست میں آچکا ہوں تو میں نے اپنی شناخت ظاہر کر دی کہ میں انڈین نیوی کا کمانڈر ہوں  پاکستان کی سیکیورٹی فورسز کا میرے ساتھ اچھا رویہ ہے اورمجھے جس طرح ہنیڈل کیا گیا وہ کسی بھی پکڑے جانے والے افسرکے ساتھ کیا جاتا ہے اپنے انٹیلی جنس آپریشن مفلوج ہونے پر میں نے یہ فیصلہ کیا کہ اس سارے مسئلے سے نکلنے کے لیے پاکستانی حکام کے ساتھ مکمل تعاون کرنا چاہیے اور وہ تمام پیچیدگیاں ختم ہوں جن کی وجہ سے خود کو پھنسا چکا ہوں میں نے ابتک جو کچھ کہا ہے وہ سب سچ ہے اور یہ بیان میں اپنی مرضی سے بغیر کسی دباﺅ کے دے رہا ہوں تا کہ پچھلے 14سال سے جو کام کرتا رہا ہوں اس سے نکل سکوںبھارت نے کلبھوشن کی گرفتاری پر احتجاج کیا اور آٹھ مئی کو عالمی عدالت انصاف میں درخواست دائر کردی جس کے بعد عالمی عدالت کیس پر نظر ثانی کرنے کا فیصلہ کیا۔آج ہیگ میں بھارت کلبھوش کی گرفتاری اور پھانسی کے معاملے پر کیس کی سماعت ہوگی پاکستان بھی اس میں شرکت کرے گا اور اپنا بھرپور موقف پیش کرے گاپاکستان کے اس مطالبے پر بھی بحث کی جائے گی کہ آیا عالمی عدالت انصاف اس معاملے میں مداخلت کر سکتا ہے یا نہیں بھارتی میڈیا کلبھوش یادیو کی گرفتاری کے بعد سے پاکستان کے خلاف زہر اگل رہا ہے،عالمی عدالت سے متعلق پہلے جھوٹا پراپیگنڈہ کیا کہ پاکستان کو کلبھوشن کی پھانسی روکنے کا حکم دیا ہے لیکن اس وقت سبکی کا سامنا کرنا پڑا جب عالمی عدالت نے اس کی تردید کی

یہ بھی پڑھیں  حج بیت اللہ، امن و سلامتی، محبت ،مساوات کی بے مثال عبادت!

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker