پاکستانتازہ ترین

اپوزیشن جماعتوں نے وفاقی بجٹ کو عوام مخالف قرار دے دیا

اسلام آباد (بیوروچیف) اپوزیشن جماعتوں نے وفاقی بجٹ کو مسترد کر دیا، کہتے ہیں کہ بجٹ عوام دوست نہیں، غریب و عوام مخالف ہے۔ بجٹ سے غریب عوام پر مہنگائی کا بوجھ مزید زیادہ ہوگا۔ لوڈشیڈنگ خاتمے کی سارے دعوے جھوٹے ہیں۔بجٹ سیشن کے بعد پارلیمنٹ ہاوس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سینیٹر رحمان ملک کا کہنا تھا کہ بجٹ کے دن کسانوں اور مزدورں کو لاٹھی چارج و آنسو گیس کا تحفہ دیا گیا۔ کسانوں اور مزدورں پر تشدد کا سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہیں۔ حکومت خود ایڈہاکیزم پر چل رہا ہے اب تنخواہیں بھی ایڈہاک پر بڑھانا شروع کر دی۔فاروق ستار کا بھی کہنا تھا کہ غریبوں پر ٹیکسوں کا بوجھ بڑھایا گیا ہے، ہم اس بجٹ کو مکمل مسترد کرتے ہیں۔پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اسد عمر کا کہنا تھا کہ بجٹ تقریر میں ہوگا ہوگی اور کریں گے جسی باتیں ہیں۔ چار سال کے اندر 22 ہزار ارب سے زائد قرضوں سے تجاوز کر گیا ہے۔ سب سے خطرناک بات یہ ہے کہ برآمداد کم اور درآمداد بڑھ رہی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ملک بیرونی قرضوں کی دلدل میں پهنستا جا رہا ہے۔بابر اعوان نے کہا کہ تخواہوں میں کم از کم تیس فیصد اضافہ ہونا چاہیے تھا۔ دنیا کے مہنگے ترین قرضے ان پانچ سالوں میں لیے گئے۔جمشید دستی کا کہنا تھا کہ حکومت کی چار سالہ کارکردگی ان کے منہ پر طماچہ ہے۔ کسانوں کے ساتھ ظلم کیا گیا۔ اٹھ کروڑ کی نواز شریف کی گھڑی پر کوئی ٹیکس نہیں لگایا جاتا۔ پوری قوم کو اس بجٹ پر غم و غصہ ہے۔

یہ بھی پڑھیں  آزاد کشمیر:تھانہ گڑھی دوپٹہ ٗ ان ایکشن ٗ 13کلوچرس برآمدگاڑی تحویل میں لےلی گئی

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker