پاکستانتازہ ترین

عمران خان اور تحریک انصاف کو نوٹس جاری

اسلام آباد (بیوروچیف) سپریم کورٹ میں عمران خان کی آف شور کمپنی سے متعلق درخواست کی سماعت کل تک ملتوی کردی ،عمران خان اور تحریک انصاف کو نوٹس جاری کر دئیے گئے، عدالت نے حکم دیا ہے کہ عمران خان اور تحریک انصاف ایک ہفتے میں جواب دیں۔ ذرائع کے مطابق عدالت نے حنیف عباسی کی طرف سے دائر کردہ درخواست پر عمران خان اور تحریک انصاف کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کہا عمران خان اور تحریک انصاف ایک ہفتے میں جواب دیں، الیکشن کمیشن فارن فنڈنگ بارے قانونی معاونت فراہم کرے، دوران سماعت چیف جسٹس نے تحریک انصاف کے وکیل سے اہم سوالات کے جوابات بھی طلب کرلیے ، چیف جسٹس نے کہا عمران خان نے جمائمہ سے ادھار رقم لی، رقم ثابت کرنا ہے، بنی گالہ جائیداد خریداری کیلئے عمران خان کا جمائمہ سے قرض لینا ثابت نہ ہوا تو اس کے نتائج کیا ہونگے، جسٹس عمر عطا بندیال نے کہا انکم ٹیکس قانون کی تفصیلات بھی عمران خان کے وکیل فراہم کریں، چیف جسٹس نے مزید کہا درخواست گزار یہ نہیں چاہتا کہ عمران خان کو سزا دلوائی جائے، کیس یہ ہے کہ اثاثے ظاہر نہ کرنے پر عمران خان صادق وامین نہیں ہے۔سپریم کورٹ میں عمران خان کی آف شور کمپنی سے متعلق کیس کی سماعت چیف جسٹس کی سربراہی میں تین رکنی بینچ کیس کی سماعت کی ، عمران خان کے وکیل نعیم بخاری نے دلائل کا آغاز کیا تو چیف جسٹس نے نعیم بخاری کو ہدایت کی گزشتہ سماعت پر آپ سے جو سوالات کیے تھے، انکے جوابات دے دیں، جس پر نعیم بخاری نے کہا کوشش کرونگا تمام سوالات کے جوابات دوں۔نعیم بخاری نے اپنے دلائل میں کہا 2002 تک عمران خان پبلک آفس ہولڈر نہیں تھے، 1978 سے 1988 تک عمران پروفیشنل کرکٹر رہے جبکہ کاونٹی کرکٹ انگلینڈ میں بھی کھیلتے رہے، 1981 تک عمران خان پاکستان میں مقیم نہیں تھے،جس پر چیف جسٹس نے کہا ہم نے سوال کیا تھا کہ پاکستان میں اور غیر ملک میں مقیم کیلیے قانون کیا کہتا ہے، رہائیشی اور غیر رہائیشی کے حقوق کا فرق جاننا ضروری ہے جس پر نعیم بخاری نے کہا نیازی سروسز لیمٹڈ میں تین کمپنیوں لینگٹری ٹرسٹی لمیٹڈ، لینگٹری سیکریٹریز لمیٹڈ اور لینگٹری کنسلٹنٹ لمیٹڈ کے تین تین پاؤنڈ شئیرز تھے، جس پر چیف جسٹس نے کہا امینسٹی اسکیم پاکستان کے رہائیشیوں کے لئے تھی ،حنیف عباسی کے وکیل کا موقف ہے کہ لندن فلیٹس نیازی سروسز لمیڈڈ کی ملکیت ہے جو پاکستان میں قائم نہیں اس لئے عمران خان اسکیم سے فائدہ نہیں اٹھا سکتے یہ تحفظات ہیں اکرم شیخ کو جبکہ جسٹس فیصل عرب نے پوچھا عمران خان آف شور کپمنی کے شیئرز ہولڈر تھے؟ نعیم بخاری نے بتایا کہ کمپنی میں عمران خان شیئرز ہولڈرز نہیں تھے۔

یہ بھی پڑھیں  ایم کیو ایم نے پی ٹی آئی کے کیخلاف پرچہ کٹوا دیا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker