شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / نواز شریف کو صدر بنانے کیلئے پارٹی آئین میں ترمیم کی منظوری

نواز شریف کو صدر بنانے کیلئے پارٹی آئین میں ترمیم کی منظوری

اسلام آباد(بیوروچیف) مسلم لیگ (ن) کی مرکزی مجلس عاملہ نے پارٹی کے آئین میں ترمیم کی منظوری دے دی ہے، جس کے بعد پارٹی صدارت کے لئے نواز شریف کی راہ ہموار ہوگئی ہے ۔ ذرائع کے مطابق نون لیگ کی مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس میں پارٹی کے آئین میں ترمیم قائم مقام جنرل سیکریٹری احسن اقبال نے پیش کی، اس سے قبل مسلم لیگ (ن) کے آئین کے تحت کوئی بھی نااہل یا ایسا شخص جو ممبر قومی اسمبلی بننے کا اہل نہیں تھا وہ پارٹی کا عہدہ بھی نہیں رکھ سکتا تھا لیکن اب پارٹی کے آئین کے آرٹیکل 120 کی ذیلی شق 3 میں ترمیم کردی گئی ہے جس کے بعد نااہل شخص پارٹی عہدہ رکھ سکتا ہے۔ اس موقع پر اراکین نے متفقہ طور پر اس ترمیم کو منظور کرلیا، پارٹی آئین میں ترمیم کی منظوری کے بعد میاں نوازشریف کے پارٹی صدر بننے کے واضح امکانات روشن ہوگئے ہیں۔ذرائع کا کہنا کہ اس ترمیم کی پارٹی کو نون لیگ کے جنرل کونسل اجلاس سے توثیق کرائی جائے گی اور الیکشن بل 2017 قومی اسمبلی سے منظور ہونے کے بعد پارٹی کی جنرل کونسل کا اجلاس بلایا جائے گا جس میں نوازشریف کو باضابطہ پارٹی صدر مقرر کیا جائے گا۔ اس سے قبل وفاقی وزیر مشاہد اللہ نے نوازشریف پر اعتماد کی قرارداد بھی پیش کی جو منظور کرلی گئی، قرار داد میں نوازشریف کی بطور وزیراعظم کارکردگی اور ان کے چار سالہ دور میں ترقیاتی کاموں پر انہیں خراج تحسین پیش کیا گیا تھا۔واضح رہے کہ اسلام آباد کے پنجاب ہاؤس میں مسلم لیگ (ن) کی مرکزی مجلس عاملہ کا اجلاس قائم مقام صدر سردار یعقوب کی زیر صدارت ہوا، اجلاس میں شہبازشریف، وزیراعظم شاہد خاقان عباسی، وزیراعظم آزاد کشمیر اور وزیراعلیٰ گلگت بلتستان سمیت ،وزیر داخلہ احسن اقبال، طلال چوہدری سمیت کئی اہم وفاقی نے شرکت کی۔ذرائع کے مطابق اجلاس میں آج احتساب عدالت کے باہر پیدا ہونے والی صورتحال پر بھی غور کیا گیا، اس موقع پر میاں نوازشریف اور چوہدری نثاراجلاس میں شریک نہیں ہوئے۔دوسری جانب کل چوہدری جعفر اقبال کی زیرصدارت پارٹی کے نئے صدر کے لئے پارٹی الیکشن کمیشن میں صبح سات سے نو بجے تک کاغذات جمع ہونگے جس کے بعد ان کی اسکروٹنی ہوگی، پاکستان مسلم لیگ (ن) کی مرکزی جنرل کونسل کا دوسرا اجلاس تین اکتوبر 10 بجے صبح کنونشن سینٹر اسلام آباد میں ہوگا جس میں مسلم لیگ (ن) کے نئے صدر کا انتخاب کیا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں  ہمارے مخالفین کے پاس کلاشنکوف کلچر کے علاوہ کچھ نہیں،ڈاکٹر راجہ عامر زمان