شہ سرخیاں
Home / تازہ ترین / پھولنگر: محکمہ لائیو سٹاک نے زہریلا مواد بر آمد کرکے فیکٹری سیل کرکے مقدمہ درج کرا دیا۔

پھولنگر: محکمہ لائیو سٹاک نے زہریلا مواد بر آمد کرکے فیکٹری سیل کرکے مقدمہ درج کرا دیا۔

بھائی پھیرو(نامہ نگار)فیکٹری کی تیار کردہ جعلی اور زہریلی خوراک کھانے سے مویشیوں کی شرح اموات میں بے پناہ اضافہ،کروڑوں روپے کے سینکڑوں مویشی ہلاک ہونے سے کسان کنگال بن گئے۔چھاپہ مار کر محکمہ لائیو سٹاک نے دو ہزار من زہریلی کھاد ، زہریلے کیمیکل اور زہریلا مواد بر آمد کرکے فیکٹری سیل کرکے مقدمہ درج کرا دیا۔تفصیلات کے مطابق محکمہ لائیو سٹاک کے ڈپٹی ڈائریکٹر عبدالجبار کو اطلاع ملی کہ بھائی پھیرو کے نواح میں گولڈن اڈا کے قریب واقع ابراہیم کیٹل آئیل مل میں مویشیوں کی ناقص،زہریلی اور مضر صحت خوراک تیار کر کے مویشیوں کی زندگیوں سے کھیل رہی ہے اور یہ زہریلی خوراک کھانے سے اب تک لاکھوں روپے کے سینکڑوں مویشی لقمہ اجل بن چکے ہیں اور گردونواح میں مویشیوں کی شرحاموات میں ناقابل یقین حد تک اضافہ ہو چکا ہے۔گزشتہ روز ڈپٹی ڈائریکٹر عبدالجبار،اے سی پتوکی انعم زید نے اپنی ٹیم کے ہمراہ مزکورہ فیکٹری پر چھاپہ مارا تو وہاں ناقص پھک،ہسپتالوں کی خون آلوداور زہریلی ادویات سے آلودہ کاٹن ویسٹ،کیڑے مکوڑوں سے پر رائس پالش،مضر صحت زہریلے رنگ اور دیگر مواد موجودتھا۔اس زہریلے مواد کی بارہ سو بوری اور تیار شدہ خوراک کی ایک ہزار بوری کو موقع سے قبضہ میں لیکر فیکٹری کو سیل کردیا گیا اور فیکٹری مالک شکیل احمدکے خلاف تھانہ بھائی پھیرو صدر میں مقدمہ درج کرا دیا گیا۔موقع پر موجود صحافیوں سے گفتگو کرتے ڈاکٹر جبار نے بتایا کہااس زہریلی خوراک کے کھانے سے گردونواح میں سینکڑوں مویشی مر چکے ہیں۔کسان بورڈ تھانہ بھائی پھیرو کے رہنما سردار محمد امجد ڈوگر ایڈووکیٹ نے بتایا کہ مویشی مرنے سے کسان کنگال بن چکے ہیں انہوں نے مطالبہ کیا اس فیکٹری سمیت ارد گرد میں قائم دیگر خوراک بنانے کی فیکٹریوں کے خلاف بھی سخت کاروائی کی جائے اور متا ثرہ کسانوں کی امدادکی جائے۔

x

Check Also

کالم : سانچ اقوام متحدہ کے عالمی دن اور ہماری سرگرمیاں تحریر : محمد مظہررشید چودھری

کالم : سانچ اقوام متحدہ کے عالمی دن اور ہماری سرگرمیاں تحریر ...