پاکستانتازہ ترین

ایس ایس پی تشدد کیس: عمران خان کی بریت پر فیصلہ محفوظ

اسلام آباد(بیوروچیف)انسداد دہشت گردی عدالت نے ایس ایس پی تشدد کیس میں چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی بریت سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا ہے، جسے پچیس اپریل کو سنایا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق انسداد دہشتگردی عدالت اسلام آباد میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے خلاف ایس ایس پی تشدد کیس ، پی ٹی وی اور پارلیمنٹ حملہ کیس کی سماعت ہوئی، چیئرمین پی ٹی آئی اپنے وکیل بابر اعوان کے ہمراہ عدالت پہنچے۔ انسداد دہشت گردی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے چیئرمین پی ٹی آئی کے خلاف ایس ایس پی تشدد کیس کی سماعت کی، اس موقع پر عمران خان کی بریت کی درخواست پر دلائل سنے گئے،پراسیکیوٹر نے مؤقف اختیار کیا کہ قانونی تقاضے پورے کرنے کے بعد عمران خان کو اشتہاری قرار دیا گیا، بریت کی درخواست قبل از وقت ہے جو جلد بازی میں دی گئی۔اپنے دلائل میں پراسیکیوٹر نے مؤقف اختیار کیا کہ عدالت سے بھاگنے اور مفرور رہنے کی قانون میں الگ سے بھی سزا موجود ہے، ابھی تک مکمل چالان داخل نہیں کرایا گیا، حتمی چالان میں مزید گواہ بھی شامل کیےجائیں گے۔انسداد دہشت گردی کی عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد عمران خان کی بریت سے متعلق درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا جو 25 اپریل کو سنایا جائے گا۔اس سے قبل دو جنوری کو انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کے جج شاہ رخ ارجمند نے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے خلاف ایس ایس پی تشدد کیس ، پی ٹی وی حملہ سمیت چاروں مقدمات میں عمران خان کی ضمانت منظور کیں تھی۔عدالتی فیصلے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ  ثابت ہو گیا میں صادق اور امین ہوں ، دہشت گرد نہیں، کیونکہ دہشت گردی کے قانون کو سیاسی مخالفین کیخلاف استعمال کیا گیا۔چیئرمین پی ٹی آئی نے اس امید کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اگلی حکومت پی ٹی آئی کی ہوگی جہاں ہمارا مقابلہ سیاسی پارٹی سے نہیں مافیا سے ہوگا۔واضح رہے کہ آج انسداد دہشت گردی کی عدالت نے دوہزار چودہ کے دھرنے کے دوران دائر کیے گئے چار مقدمات میں عمران خان کی ضمانت درخواست پر فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker