تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:مذہبی جماعتوں کی کال پر جمعتہ المبارک کو یوم تحفظ ختم نبوت کے طور پرمنایا گیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)مذہبی جماعتوں اورمتحدہ مجلس عمل کی کال پر جمعتہ المبارک کو یوم تحفظ ختم نبوت کے طور پرمنایا گیا۔ قادیانیوں کو کلیدی عہدوں سے نکالنے اور مسلمانوں کو دہشت گرد کہنے پر وزیر اطلاعات کے استعفی کا مطالبہ۔جگہ جگہ علما کا جمعتہ المبارک کے خطبات میں مطالبہ ۔تفصیلات کے مطابق متحدہ مجلس عمل اور دیگر مذہبی جماعتوں کی کال پر جمعتہ المبارک کو یوم تحفظ ختم نبوت کے طور پرمنایا گیا ۔ خطبہ جمعہ میں معروف عالم دین اور جمعیت العلمائے اسلام کے رہنما رانا ظہیرنے کہا کہ بعض لوگ غیروں کو خوش کرنے کیلیے قادیانیوں کو کلیدی عہدوں پر تعینات کرکے اسلامی قوانین کو ختم کرنے کی سازش کر رہے ہیں۔ کروڑوں مسلمانوں کے جذبات کو ٹھیس پہنچانے والے کسی رعایت کے مستحق نہیں۔ عقیدہ ختم نبوت ہر مسلمان کے ایمان کا حصہ ہے جس پر کوئی مصلحت برداشت نہیں کی جاسکتی۔جماعت اسلامی کے ضلع قصور امیر راؤ اختر علی نے نواحی گاؤں کچہ پکا میں خطبہ جمعہ دیتے کہا کہ ختم نبوت کے قانون بنانے کیلیے ہمارے ملک کے ہزاروں مسلمانوں نے جانوں کے نزرانے پیش کیے اور ایک طویل جدو جہد کے بعد قادیانیوں کو کافر قرار دیا گیا۔اس کیلیے مولانا مودودی سمیت کئی علما کو سزائے موت کی سزاؤں کا سامنا کرنا پڑا ۔اب موجودہ حکومت قادیانیوں کو کلیدی عہدوں پر لگا کر مسلمانوں کے جزبات سے کھیل رہی ہے ،انہوں نے قادیانیوں کی حمایت کرنے پر وزیر اطلاعات کے مستعفی ہونے اور قادیانیوں کو کلیدی عہدوں سے ہٹانے کا مطالبہ کیا۔جے یو پی کے مشتاق نورانی نے کہا کہ ملک میں افراد اور خاندانوں کی بجائے آئین و قانون کی بالادستی ہونی چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ تحریک ختم نبوت کیلیے مسلمانان پاک و ہند نے ہزاروں جانوں کے نزرانے پیش کیے ہیں اور یہ قانون ہمارے ایمان کا حصہ ہے اس قانون کو ختم کرنے والے عبرت کا نشان بن جائیں گے۔علمائے اکرام نے مطالبہ کیا کہ ہمارے متفقہ آئین سے چھیڑ چھاڑ نہ کی جائے وگرنہ ملک بھر کے کروڑوں مسلمان ختم نبوت اور ناموس رسالت کیلیے اپنی جانیں قربان کر دیں گے۔

یہ بھی پڑھیں  سابق برطانوی وزیراعظم مارگریٹ تھیچرانتقال کرگئیں

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker