پاکستانتازہ ترین

عمران خان کی وجہ سے قومی سلامتی پالیسی ابھی تک نہیں بن پائی?

imranاسلام آباد(بیوروچیف) پاکستان تحریک انصاف کے مخالفیں کا الزام ہے کہ عمران خان کی وجہ سے قومی سلامتی پالیسی ابھی تک نہیں بن پائی ہے ، وہ ایسے وقت میں لندن گئے جب حکومت نے پالیسی تشکیل دینے کیلئے آل پارٹیز کانفرنس بلارکھی تھی۔ تو کیاعمران خان کے مخالفین یہ الزام درست ہے کہ وہ قومی سلامتی پالیسی کے تشکیل نہ پانے میں ملک کی تیسری بڑی جماعت کے سربراہ کا ہاتھ ہے۔  پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ کی ترجمان ڈاکٹر شیریں مزاری نےاس الزام کو مسترد کرتے ہوئے کہا کہ آل پارٹیز کانفرنس کو مؤخر کرنے کی وجہ عمران خان نہیں ہیں بلکہ حکومت خود اس کیلئے تیار نہیں ۔ مسلم لیگ (ن) کی حکومت نے متفقہ قومی سلامتی پالیسی  تشکیل دینے کیلئے12 جولائی کو آل پارٹیز کانفرنس بلائی تھی جس میں تمام سیاسی ومذہبی جماعتوں کے سربراہان کو مدعو کیاگیاتھا لیکن یہ کانفرنس تاحال منعقد نہیں ہوسکی ہے۔ یادرہے کہ عمران خان اے پی سی سے دوروز قبل ہی لندن کیلئے روانہ ہوگئے تھے، ان کا کہنا تھا کہ وہ لندن میڈیکل چیک اپ کیلئےجارہے ہیں۔ کچھ مخالفین کا کہنا ہے کہ اے پی سی عمران خان کے لندن روانگی کےباعث مؤخرہورہی ہے جبکہ شیریں مزاری نے واضح کیا ہے کہ کانفرنس منعقد نہ ہونے کی وجہ عمران خان نہیں بلکہ کچھ اور ہے

یہ بھی پڑھیں  پنجاب کا 1 ہزار 9 سو 65 ارب حجم کا بجٹ آج پیش کیا جائیگا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker