تازہ ترینعلاقائی

حجرہ شاہ مقیم:آٹھ سالہ بچہ نہرمیں ڈوب گیا،ہسپتال میں عملہ نہ ہونے سے بچہ دم توڑ گیا

Bilal-16-7-13-2حجرہ شاہ مقیم (نامہ نگار)حجرہ شاہ مقیم میں آٹھ سالہ بچہ نہر میں ڈوب گیا،لو گ نکال کر ہسپتال لے گئے جہاں عملہ غائب تھا،مسیحا کاانتظار کرتے ہوئے معصوم لخت جگر دم توڑ گیا ،ورثاء کا نعش سڑک پر رکھ کر احتجاجی مظاہرہ،ڈاکٹروں کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ،وزیرا علیٰ پنجاب نے نوٹس لینے کی اپیل۔تفصیلات کے مطابق حجرہ شاہ مقیم کی نہر کنارے واقع امتیاز کالونی کے محنت کش محمد اجمل کا آٹھ سالہ بیٹا دوئم جماعت کا طالب علم محمد بلال سڑک کنارے جا رہا تھاکہ بارش کے باعث پھسلن کی وجہ سے سلپ ہو کر نہر میں جا گرا جسے تیز لہریں بہا کر لے گئیں اسی دوران قریبی لوگوں نے غوطے کھاتے بلال کو نکالا اور ہسپتال لے گئے جہاں بدقسمتی سے ڈاکٹر صغیر احمد خاں انچارج سمیت ڈاکٹر خالد،انعام اللہ،جاوید ودیگر میں سے کوئی بھی موجود نہ تھا انتظار کے دوران لوگوں نے بچے کا پیٹ دبا کر پانی نکالا تو بچے نے سانس لینے شروع کر دیئے بعدا زاں ڈیڑھ گھنٹہ تک کوئی ڈاکٹر نہ پہنچا اور مسیحاکا انتظار کر تے کرتے بلال نے زندگی کی کشمکش ہار کر موت کو گلے لگا لیا،جسکی اطلاع شہر بھر میں جنگل کی آگ کی طرح پھیل گئی اور ورثاء سمت سینکڑوں شہریوں نے نعش نہر کے پل پر رکھ کر چاروں طرف کی ٹریفک بلاک کر دی اور ٹائروں کو آگ لگا کر احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے ڈاکٹروں سمیت ہسپتال عملہ کے خلاف قتل کا مقدمہ درج کرنے کا مطالبہ اور وزیراعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف سے فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے۔

یہ بھی پڑھیں  بھائی پھیرو:فرنچائز پر بل جمع کرنے والا لوگوں کے لاکھوں روپے لیکر رفو چکر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker