شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / احتساب یاخونیں انقلاب اشرافیہ انتخاب کرے: محمدناصراقبال خان

احتساب یاخونیں انقلاب اشرافیہ انتخاب کرے: محمدناصراقبال خان

لاہور(پریس ریلز) انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان، سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدور ندیم اشرف ،تنویرخان ، مخدوم وسیم قریشی ایڈووکیٹ،میاں زاہدلطیف، محمداشرف عاصمی ایڈووکیٹ ،سلمان پرویز،مرکزی نائب صدور ناصرچوہان ،ممتازاعوان ،محمد شاہد محمود ،صدرنیویارک محمدجمیل گوندل،صدربلوچستان کامران خان بازئی ،صدر پنجاب محمدیونس ملک ، صدر مدینہ منورہ سرفرازخان نیازی،صدرکراچی یونس میمن ،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو ،صدرفیصل آبادندیم مصطفی،صدرٹیکسلا سردارمنیراختر اور صدر قصور میاں اویس علی نے کہا ہے کہ احتساب یاخونیں انقلاب اشرافیہ انتخاب کرے۔نیب کاکردارمستحسن ہے،حکام نے عبدالعلیم خان کوگرفتارکرکے اپنے خلاف منفی پراپیگنڈا دفن کردیا۔احتساب سے صرف دمڑی جائے گی لیکن اگرملک میں خونیں انقلاب آگیاتو دمڑی کے ساتھ ساتھ چوروں کی چمڑی بھی جائے گی۔پاکستان کے سیاسی سرمایہ داروں کے بیرون ملک پڑے پیسے کی وطن واپسی بھی یقینی بنائی جائے ۔جوپاکستان کی بجائے بیرون ملک تجارت کرتاہے اسے ہمارے ہاں سیاست اورحکومت کرنے کابھی کوئی حق نہیں پہنچتا ۔پاکستان میں احتساب کاآغازخوش آئند ہے مگراس کی رفتارتسلی بخش نہیں ۔اگرنیب کچھوے کی رفتارسے چلتارہاتوپھربڑے مگرمچھ قابونہیں آئیں گے ۔چاروں صوبوں میں بدعنوانوں کیخلاف منظم اورموثراندازسے کریک ڈاؤن کیا جائے ۔وہ ایک اجلاس سے خطاب کررہے تھے ۔ محمدناصراقبال خان، محمدرضاایڈووکیٹ،تنویرخان اورمخدوم وسیم قریشی نے مزید کہا کہ احتساب کوسیاسی انتقام قراردینے والے عوام کوبیوقوف نہیں بناسکتے ۔شورمچاناچورکی فطرت ہے ،کسی امتیاز کے بغیر چوروں کوایوانوں سے گھسیٹ کرزندانوں میں ڈالناہوگا۔ انہوں نے کہا کہ بھارت سے سنجیدہ رویوں یا مذاکرات کی امید رکھنا حماقت اورجہالت ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت سے دوستی کادم بھرنے والے عہدحاضر کے ابوجہل ہیں۔ پاکستان اورپاکستانیوں کیلئے بھارت کاخبث باطن کسی سے پوشیدہ نہیں ،وہ پاکستان میں سرگرم کسی میرجعفر یامیرصادق کی مددنہیں بلکہ انہیں صرف اپنے مخصوص اورمذموم مفادات کیلئے استعمال کرتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ غداروں کے انجام بدسے تاریخ کے اوراق بھرے پڑے ہیں ۔ جس کسی کے کوئی تحفظات ہیں وہ دشمن ملک کی گودمیں بیٹھ کردھمکانے کی بجائے براہ راست ریاست پاکستان کومخاطب کرے ۔انہوں نے کہا کہ ناراض بلوچ رہنماؤں کیلئے قومی دھارے میں واپسی کاراستہ ہموارہونامثبت اقدام ہے ۔انہوں نے کہا کہ نناوے فیصدگلے شکوے آپس میں گلے ملنے سے دورہوجاتے ہیں

یہ بھی پڑھیں  سب سے پہلے پاکستان