شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / چونیاں: عالمی یوم مزدور صرف ایک رسمی دن بن گیا ہے ۔ افضل شاہین

چونیاں: عالمی یوم مزدور صرف ایک رسمی دن بن گیا ہے ۔ افضل شاہین

چونیاں (نامہ نگار) مہنگائی نے مزدور کی کمر توڑ کر رکھ دی ہے ۔ عالمی یوم مزدور صرف ایک رسمی دن بن گیا ہے ۔ پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں تعلیم یافتہ اساتذہ کا استحصال کیا جاتا ہے ۔ برائے نام چند سکول ہوں گے جہاں اساتذہ کو مزدوروں کی کم از کم تنخواہ کے برابرتنخواہ ملتی ہو گی ۔ وگرنہ اکثر سکولوں میں چند ہزار تنخواہ دے کر حکومتی پالیسیوں کا مذاق اڑایا جا تا ہے ۔ پاکستان ایک ترقی پذیر ملک ہے جس میں مزدور ایک ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے ۔ ملکی پیداوار کی بہتری کیلئے مزدوروں کا احترام انتہائی ضروری ہے ۔ ۔ ان خیالات کا اظہار ماہر تعلیم محمد افضل شاہین نے مزدوروں کے عالمی دن پر اپنے بیان میں کیا ۔ انہوں نے کہا کہ 8کروڑ مزدوروں کی نمائندگی کیلئے پارلیمنٹ میں ان کا ایک بھی نمائندہ نہیں ہے ۔ پارلیمنٹ میں اکثریت سرمایہ داروں اور جاگیرداروں کی ہے ۔ ایسے حالات میں مزدروں کیلئے احسن اقدامات کون کرے گا ۔ مہنگائی کی چکی میں پس کر مزدور کی حالت انتہائی ناگفتہ بہ ہے ۔ حکومت مہنگائی کو کنٹرول کرنے کیلئے اقدامات کرے ۔ سرکاری محکموں میں چھوٹے ملازمین مہنگائی سے سب سے زیادہ متاثر ہوتے ہیں اور ان کی تنخواہوں میں اضافہ بہت کم ہوتا ہے جبکہ بڑے آفیسران کی تنخواہوں میں اضافہ زیادہ ہوتا ہے ۔ آئندہ بجٹ میں چھوٹے ملازمین کی تنخواہوں میں خاطر خواہ اضافہ کرے تاکہ وہ خوفناک حد تک بڑھی ہوئی مہنگائی کا مقابلہ کر سکیں ۔

یہ بھی پڑھیں  پاکستان کی بقا، آزادی کشمیر میں
error: Content is Protected!!