تازہ ترینسائنس و آئی ٹی

یوٹیوب کی بندش میں ناکامی کا اعتراف

you toubلاہور(پاک نیوز)پاکستان کے انفارمیشن اینڈ ٹیلی کام اتھارٹی نے متنازعہ مواد کی حامل ویب سائٹ کو بلاک کرنے میں ناکامی کا اعتراف کرلیا۔  لاہورہائیکورٹ میں یوٹیوب کھولےجانےسے متعلق دائردرخواست کی سماعت ہوئی۔ وزارت انفارمیشن ٹیکنالوجی اور پی ٹی اے نےعدالت کو بتایا کہ ہم اس بات کی مکمل ضمانت نہیں دے سکتے کہ پاکستان میں یوٹیوب پرتوہین آمیز مواد نہیں دیکھا جائےگا۔ وزارت کا مؤقف تھا کہ ہمارے پاس ایسی ٹیکنالوجی نہیں کہ ہم متنازعہ ویب سائٹ کو مکمل طور پر بلا ک کردیں۔ یاد رہے کہ پیغمبر اسلام کے خلاف بنائی جانےوالی توہین آمیز ویڈیو یوٹیوب پرجاری ہونے پرملک بھر میں شدید احتجاج ہواجس پر حکومت نےگزشتہ سال ستمبر میں یوٹیوب پر پابندی لگادی تھی۔ اس دوران مختلف حلقوں کی جانب سے یو ٹیوب پر پابندی ہٹانے کیلئے کوششیں بھی کی گئیں لیکن انہیں شدید مخالفت کاسامنا کرنا پڑا۔ جسٹس منصور علی شاہ نےکہا کہ یوٹیوب کی بندش کےحوالے سے پی ٹی اے اور وزارت نےجھوٹ  بولا۔ انہوں نے ڈائریکٹر جنرل پی ٹی اے وسیم توقیر کو ہدایت کی کہ وہ درخواست گزار، وزارتی نمائندوں اور آئی ٹی ماہرین کےساتھ بیٹھ کر طے کریں کہ ایسی سائٹ کو بلاک کرنے کےحوالے ٹیکنالوجی موجود ہے یا نہیں۔  انہوں نے یہ بھی کہا کہ اگر پی ٹی اے ٹیکنالوجی کےحوالے سےکوئی جواب داخل کرانے میں ناکام رہی توعدالت آئین کے مطابق بنیادی حقوق اور عوامی مفاد میں حکم جاری کرےگی۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button