شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل سے حکومتی اتحاد ٹوٹنے کا خطرہ ٹل گیا

بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل سے حکومتی اتحاد ٹوٹنے کا خطرہ ٹل گیا

اسلام آباد(پاک نیوز) حکومت نے بلوچستان میں توانائی، ڈیم اور سڑکیں تعمیر کرنے کی شرائط مان لیں۔ شرائط ماننے پر بی این پی مینگل وفاقی حکومت کی بجٹ منظوری میں حمایت کرے گی۔ذرائع کے مطابق وفاقی حکومت بی این پی مینگل کو میگا پراجیکٹس کے لئے فنڈز دینے کو بھی تیار ہو گئی ہے۔ وزیراعظم عمران خان نے بھی بلوچستان کے لئے ترقیاتی فنڈز جاری کرنے پر آمادگی ظاہر کر دی ہے۔ذرائع کے مطابق بی این پی مینگل اور حکومت میں معاملات طے پا گئے ہیں۔ دونوں اتحادیوں میں معاملات وزیراعظم آفس میں اہم ملاقات میں طے پائے۔پہلی ملاقات آج دوپہر پارلیمنٹ لاجز جبکہ دوسری رات 8 بجے وزیراعظم آفس میں ہوئی۔ حکومت اور بی این پی مینگل کے درمیان مذاکرات پر وزیراعظم کو آگاہ رکھا گیا۔حکومتی وفد میں پرویز خٹک، قاسم سوری، خسرو بختیار اور ارباب شہزاد شریک ہوئے جبکہ بی این پی کے اختر مینگل، جہانزیب جمالدینی، ہاشم نوتیرئی اور عاصم بلوچ شریک ہوئے۔قاسم سوری، پرویز خٹک اور ارباب شہزاد پر مشتمل کمیٹی شرائظ پر عملدرآمد کرائے گی۔ ڈپٹی سپیکر قاسم سوری کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان بلوچستان سمیت تمام پسماندہ علاقوں کو ترقی دیں گے، بی این پی مینگل سے تمام معاملات خوس اسلوبی سے طے پا گئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں  انٹرنیٹ پرنوکری کاجھانسہ دیکرشہریوں کو لوٹنے والا نوجوان گرفتار
error: Content is Protected!!