تازہ ترینعلاقائی

محکمہ انہار ہیڈ ورکس بلوکی دیکھ بھال کیلیے رکھے گئے ملازم گھروں میں فارغ بیٹھ کرتنخواہیں بٹورنے لگے

head balokiبھائی پھیرو(نامہ نگار) محکمہ انہار ہیڈ ورکس بلو کی دیکھ بھال کیلیے رکھے گئے سینکڑوں ملازم ڈیوٹیاں انجام دینے کی بجائے گھروں میں فارغ بیٹھ کر تنخواہیں بٹورنے لگے ۔قومی خزانے کو کروڑوں کا نقصان۔متعدد ملازم افسروں کے گھروں میں ذاتی ملازم بن گئے۔افسروں کے ہیڈ ورکس پر رہائش نہ رکھنے کی وجہ سے اربوں کی لاگت سے بننے والے رہاشی بنگلے الوؤں کی پنا گاہوں میں تبدیل۔تفصیلات کے مطابق پنجاب کی معروف ترین سیر گاہ ہیڈ بلوکی جوکہ اندرونی و بیرونی اہم شخصیات کی توجہ کا مرکز رہی ہے اب وہاں ویرانی ہی ویرانی ہے۔لاکھوں کے قیمتی پودے،فوارے، جنگلے،پائپ و دیگر سامان نگرانوں کی عدم توجہ کیوجہ سے چور لے گئے۔اور پودے سوکھ گئے۔جھیل پر لگی قیمتی ٹائیلیں بھی ملی بھگت کرکے ادھر ادھر کرلی گئیں،جبکہ ہٹھاڑ کالونی و ڈھایا کالونی کے رہائشی ملازمین کے کوارٹرون کو پانی سپلائی کرنے والی واٹر ٹینکیاں و ٹیوب ویل برباد ہوگئے ،سامان افسران ڈکار گئے۔سڑک کنارے کھڑے قیمتی درختوں کو افسران کے چہیتوں نے کاٹ کھایا۔ستم ظریفی کا یہ عالم ہے کہ ایڈہاک و ریگولر درجہ چہارم کے ملازمین سمیت افسران ہیڈ ورکس پر آنا اور ڈیوٹیاں دینا اپنی توہین سمجھتے ہیں جس کی وجہ سے سیاحوں کا مرکز ہیڈبلوکی ویران ہو چکا ہے اور افسران نے ایک پرائیویٹ سیر گاہ کے مالکان سے ساز باز کرکے ہیڈ بلوکی کی رونقیں ویران جبکہ ایک پرائیویٹ سیر گاہ کی رونقیں بحال کر دی ہیں ۔ہیڈ بلوکی کی دیکھ بھال کرنے والے سینکڑوں ملازمین افسروں کے مال مویشی و گھریلوں کام کاج کیلیے وقف ہوکر رہ گئے ہیں اور تنخواہیں سرکاری خزانے سے لے رہے ہیں۔عوامی سماجی حلقوں نے وزیر اعلی پنجاب سے یہاں ہیڈ بلو کی پر ہونے والی کھلی کرپشن کا نوٹس لیکرگھروں میں فارغ بیٹھ کر تنخواہیں بٹورنے والے وہیلے ملازمین
کو نوکریوں سے فارغ کرنے کامطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  بھارت نے سرحد پارکرنے کی کوشش کی تو نام و نشان مٹادیں گے، خواجہ آصف

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker