تازہ ترینعلاقائی

چونیاں:کشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر سب سے پراناحل طلب مسئلہ ہے،افضل شاہین

چونیاں (تحصیل رپورٹر) بھارت اپنے آئین کی دفعہ 370 اور 35 میں ترمیم سے باز رہے۔مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ بھارت کے توسیع پسندانہ ایجنڈے کا حصہ ہے۔مودی سرکار کشمیریوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ رہی ہے۔عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج کی طرف سے ہونیوالی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا نوٹس لے۔72سال گزرنے کے باوجود کشمیری اپنے حق خود ارادیت سے محروم ہیں۔ کشمیر تقسیم ہند کا نامکمل ایجنڈاہے۔ کشمیر اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈے پر سب سے پراناحل طلب مسئلہ ہے۔کشمیری عوام اپنے حق خود ارادیت کے لئے مثالی جدوجہد کر رہے ہیں اور انکی جدوجہد کو دہشت گردی کیساتھ نہیں جوڑا جا سکتا۔ان خیالات کا اظہارماہر تعلیم محمد افضل شاہین نے طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ آزادی کشمیر کی تحریک کی کامیابی درحقیقت پاکستان کی تکمیل کی تحریک ہے۔ہمیں اس تحریک کی کامیابی کے لئے ہر قسم کی قربانی دینے کا عہد کر نا ہوگا۔ ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں کی قربانیاں عالمی طاقتوں کے سوئے ہوئے ضمیر کو جگانے کے لئے کافی ہیں۔مسئلہ کشمیر کے حل تک پائدار امن نہیں ہو سکتا۔پاکستانیوں کے دل کشمیری بھائیوں کیساتھ دھڑکتے ہیں۔ مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کیمطابق حل ہونا چاہئے۔ہماری شہ رگ کشمیر ازلی دشمن بھارت کے قبضے میں ہے۔اس شہ ر گ کو آذاد کروانا ہماری ذمہ داری ہے۔ آذادی کشمیر کے لئے پاکستانی قوم کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی۔

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker