شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / پھولنگر:جماعت اسلامی آئندہ بلدیاتی انتخابات میں بھرپور حصہ لے گی،پروفیسرراؤ اختر

پھولنگر:جماعت اسلامی آئندہ بلدیاتی انتخابات میں بھرپور حصہ لے گی،پروفیسرراؤ اختر

بھائی پھیرو(نامہ نگار)جماعت اسلامی ضلع قصورنے آئندہ بلدیاتی انتخابات میں بھرپور حصہ لینے کیلیے امیدواران کی فہرستیں مرتب کرنا شروع کر دیں۔مظلوم کشمیریوں کی جدوجہد میں انکا بھرپور ساتھ دینے کا اعلان۔کے نومنتخب ارکان شوری برائے سال 2019،2020 کا اعلان کر دیاگیا۔ تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز جماعت اسلامی ضلع قصور کی مجلس شوری کا اجلاس منعقد ہوا جس میں زونل امرا نے بھی شرکت کی۔اجلاس کی صدارت امیر جماعت اسلامی ضلع قصور پروفیسر راو اختر علی نے کی۔اجلاس کے بعد جنرل سیکرٹری جماعت اسلامی ضلع قصور سردار نور احمد ڈوگر نے میڈیا حاجی محمد رمضان کے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے کہا کہ جماعت اسلامی آئندہ بلدیاتی انتخابات میں بھرپور حصہ لے گی اور ضلع بھر کے زیادہ سے زیادہ حلقوں میں صالح اور ایماندار اور عوام کی خدمت کا جزبہ رکھنے والے امیدوار کھڑے کیے جائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ ضلع بھر کے ایک چوتھائی حلقوں میں امیدواروں کے نام فائنل کرکے فہرستیں مرتب کر لی گئیں ہیں اور باقی حلقوں میں امیدوار تلاش کرنے کیلیے عوام سے رابطوں میں تیزی لائی جائے گی۔انہوں نے بتایا کہ سابقہ حکمرانوں نے لوٹ مار کرکے اپنی تجوریاں بھریں اور عوام کے بنیادی شہری مسائل کو حل نہیں کیا،موجودہ حکمرانوں نے بھی اپنے انتخابی وعدوں میں سے ایک وعدہ بھی پورا نہیں کیا بلکہ عوام کو بد امنی اورمہنگائی کے مندر میں غرق کر دیا۔اس لیے اب عوام کے پاس سوائے جماعت اسلامی کے دوسرا کوئی آپشن نہیں ہے انشا الللہ ہمارے امیدوار بھاری تعداد میں کامیاب ہونگے۔شوری کے اجلاس میں نائب امیر عثمان غنی، ابوبکر نعیم، مہر خادم حسین، مہر نور احمد، اشرف ناصر، عبدالحفیظ اطہر، عرفان اللہ چوہدری،ملک محمد صدیق، راو محمد اشرف،حاجی محمد یونس کے علاوہ ناظمین زون نے شرکت کی۔ایک قرارداد میں کشمیر پر انڈیا کے قبضہ اور مظالم کی بھرپور مزمت کرتے ہوئے کشمیری بھائیوں کی جدوجہد،کشمیری رہنما سید صلاح الدین،سید علی گیلانی اور دیگر حریت رہنماوں کی جدو جہد کو خراج تحسین پیش کیا گیا اور کہا گیا کہ جماعت اسلامی ماضی کی طرح آئندہ بھی کشمیر کی آزادی تک کشمیریوں کا بھرپور ساتھ دے گی

یہ بھی پڑھیں  آج انتخابات سے چہروں اور نظام کی تبدیلی کی خواہ قوم کوکیاملے گا..؟کچھ نہیں یاسب کچھ...!

What is your opinion on this news?