شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / تازہ ترین / بھائی پھیرو:سات ستمبر4 197کا دن پوری اسلامی تاریخ میں ایک یادگار دن ہے، راؤاختر

بھائی پھیرو:سات ستمبر4 197کا دن پوری اسلامی تاریخ میں ایک یادگار دن ہے، راؤاختر

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔سات ستمبر4 197کا دن پوری اسلامی تاریخ میں ایک یادگار دن ہے جس دن قادیانیوں کو قانونی طور پر غیر مسلم قرار دیا گیا۔امت مسلمہ اور تمام مکاتب فکر کے علمائے اکرم نے متحد ہو کر تحریک ختم نبوت چلائی اور ناموس رسالت کیلیے بے مثال قربانیوں دیں۔دور حاضر کے مسلمانوں کے چیلنجوں کا مقابلہ کرنے کیلیے عالم اسلام کو متحد ہونا ہوگا۔ان خیالات کا اظہاریوم ختم نبوت حوالے سے جماعت اسلامی کی طرف سے بلائی گئی ایک تقریب سے خطاب کرتے مختلف مکاتب فکر کے علمائے اکرام نے کیا۔ امیرجماعت اسلامی ضلع قصور راؤ اخترعلی کی صدارت میں ہونے والے اجلاس سے خطاب کر تے دیوبند مکاتب فکر کے معروف عالم دین مولانا عبدالعزیز فاروقی نے کہا سات ستمبر1974کو پاکستان کی قومی اسمبلی اور سینیٹ کے مشترکہ اجلاس میں نبی اکرم ﷺ کو آخری نبی نہ ماننے والوں کو غیر مسلم قرار دیکر ایک تاریخی کارنامہ سر انجام دیا اس کیلیے تمام مکاتب فکر کے علما اور امت مسلمہ نے بیش بہا قربانیاں دیں۔ مرزا قادیانی نے جھوٹی نبوت کا دعوی کرکے دنیا بھر کے کروڑوں مسلمانوں کے عقیدے کو للکارا اور نبوت کے تقدس کو پا مال کیا مگر ہماری بہادرامت مسلمہ نے اپنی بے مثال قربانیوں،شہادتوں اور بہادریوں کی تاریخ رقم کر کے قادیانیوں کی فرعونیت کو خاک میں ملا دیا۔پوری قوم نے متحد ہو کرثابت کیا کہ مسلمان زندگی کے ہرلمحہ میں ایک اللہ کا بندہ ہے اوایک مومن کی نماز اورقربانی،جینا مرنا صرف ایک اللہ اور اسکے آخری نبی ﷺکے لیے ہوتا ہے۔قربانی اسی جذبہ کو مضبوط کرنے اور عملی طور پر اس کے لیے تیاکرنے اور خواہشات نفس اور انا کو قربان کرنے کا درس دیتی ہے۔امیرجماعت اسلامی ضلع قصور راو اختر علی اور جماعت اسلامی شعبہ سیاسی امور ضلع قصور نے نائب صدر حاجی محمد رمضان نے کہاکہ تحریک ختم نبوت کیلیے قربانی کا یہ عمل فرعونوں سے ٹکرانے کی ہمت دیتا ہے وہ فرعون آج سے ہزاروں سال پہلے کے ہوں یا دورحاضر کے۔مسلمان کبھی بھی کسی فرعون سے مرعوب نہیں ہوتا۔انہوں نے کہا کہ ٹرمپ اور مودی آج کے فرعون ہیں۔مودی نے پاکستان کو دھمکیاں دے کر پاکستانی قوم کی جرا ت کو للکارا ہے۔آج ضرورت اس بات کی ہے کہ ان عالمی فرعونوں کا مقابلہ کرنے کے لیے عالم اسلام متحدہوجائے اور نہ صرف پاکستان بلکہ برما، کشمیر اور فلسطین میں اورپوری دنیا میں جہاں بھی مسلمانوں کا قتل عام ہورہاہے وہاں ان کو تحفظ فراہم کیاجائے۔اگرعالم اسلام میں کوئی غیرت مندحکمران ہوتا تو برما کے مسلمانوں کو اس طرح ذبح نہ کیا جاتا۔انہوں نے کہا کہ سید ابولاعلی مودودی نے مسئلہ قادیانیت لکھی تو اس وقت کے فرعونوں نے انہیں سزائے موت سنائی مگر بعد میں پاکستان کی اسمبلی نے قادیانیوں کو غیر مسلم قرار دیکر قادیانیت کو ہمیشہ کیے دفن کردیا۔جمعیت العلمائے پاکستان کے رہنما سید ذاکر حسین شاہ نے کہا کہ سات ستمبر 1974کو مولانا شاہ احمد نورانی کی قرارداد پر اسمبلی نے قانون ختم نبوت کا قانون پاس کیا۔جمعیت اہلحدیث کے مولانا معاذخالد نے مطالبہ کیا کہ قادیانیوں کے بارے بنائے گئے قانون پر پوری طرح عمل کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں  پنجاب اسمبلی کے افتتاحی اجلاس میں مہمانوں کا داخلہ بند

What is your opinion on this news?