بین الاقوامیتازہ ترین

عراق: مظاہرین کا امریکی افواج کے انخلاء تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان

بغداد(پاک نیوز ڈیسک) عراق میں ایران نواز حشد الشعبی پر امریکی حملے کے بعد امریکا کیخلاف احتجاج جاری ہے، بغداد میں مظاہرین ایک مرتبہ پھر امریکی سفارتخانے کے باہر جمع ہوئے ہیں اور عمارت پر پتھراؤ کرتے ہوئے امریکا کے پرچم جلائے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے ’’اے ایف پی‘‘ کے مطابق آج بھی مظاہرین نے امریکی سفارت خانے کے باہر 50 خیمے اور عارضی ٹوائلٹ بنائے ہیں۔ مظاہرین نے امریکی افواج کے عراق چھوڑ کر جانے تک اپنا احتجاج ختم نہ کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔فرانسیسی خبر رساں ادارے کے مطابق ایک ٹرک کے ذریعے مظاہرین نے ٹینٹ اور سینکڑوں میٹرس بغداد میں امریکی سفارتخانے کے باہر لائے اور مظاہرین میں سے بعض نے فوجی لباس پہن رکھا ہے اور امریکا کے خلاف نعرے لگائے۔اے ایف پی کے مطابق مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے عمارت کے اندر تعینات سکیورٹی اہلکاروں نے آنسو گیس سے شیلنگ کی۔ شیلنگ کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوئے جنھیں ہسپتال منتقل کیا گیا ہے۔خبر رساں ادارے کے مطابق مظاہرین میں شامل ایک شہری کا کہنا تھا کہ انہوں نے پوری رات اسی جگہ گزاری ہے۔ اس وقت تک یہاں سے نہیں جاؤں گا جب تک امریکی یہ جگہ چھوڑیں اور ہم سفارت خانے میں داخل ہوں۔ادھر امریکہ نے عراق میں ایران کے حامی مظاہرین کے اپنے سفارتخانے پر حملے کے بعد مشرق وسطیٰ میں مزید افواج بھیجنے کا اعلان کیا ہے۔امریکی سفارت خانے کے باہر رات گزارنے والے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے سکیورٹی فورسز نے آنسو گیس فائر کی۔دوسری طرف عراق میں حشد الشعبی ملٹری فورس نے اپنے حامیوں سے کہا ہے کہ وہ بغداد میں امریکی سفارت خانے کے باہر ہونے والا احتجاج ختم کر دیں تاہم سخت گیر مؤقف رکھنے والے افراد نے کہا ہے کہ وہ سفارتی مشن کے باہر بیٹھے رہیں گے۔

 

 

 

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker