تازہ ترینعلاقائی

مدعی کو جمبر چوکی پولیس نے دھکے مارکر سیڑھیوں سے نیچے گرا دیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)لاکھوں کے فراڈ کے مقدمہ کے ملزمان سے ساز باز ہو کر مدعی کو جمبر چوکی پولیس نے دھکے مارکر سیڑھیوں سے نیچے گرا دیا اور جیب سے گری رقم اور ضروری کا غزات بھی چھین لیے۔اعلی پولیس حکام سے انصاف فراہم کرنے کی اپیل۔تفصیلات کے مطابق نواحی جمبرخورد کا رہائشی اور فراڈ میں لاکھوں روپے لٹوانے والا مدعی رانا ایوب گزشتہ روز اپنے مقدمہ کی تفتیش کیلیے جمبر پولیس چوکی میں اپنے گواہ لیکر گیا مگر اسے چوکی کی سیڑھیوں پر پولیس کے اردلی نے روکا۔جب مدعی نے تفتیشی افسر کو ملنے پر اصرار کیا تو پولیس اہلکاروں نے اسے دھکا دیکر سیڑھیوں سے نیچے گرا دیا جس سے نہ صرف اسے چوٹیں آئیں بلکہ اسکی جیب سے پرس بھی نیچے گر گیا جسے پولیس اہلکاران نے اٹھا لیا۔ایوب کے مطابق اس میں اس کے ضروری کاغزات اور 7500 روپے نقدی تھی۔مدعی نے ڈی پی او قصور کو جمبر چوکی پولیس کی زیادتی کے خلاف تحریری درخواست دے دی ہے جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ متعلقہ پولیس اہلکاران کو معطل کرکے سخت کاروائی کی جائے اور فراڈ کے ملزمان کو گرفتار کرکے اس کے لاکھوں روپے واپس دلوائے جائیں۔یاد رہے کہ گزشتہ روز کار کے ڈیلر مدعی ایوب سے ملزمان احسان الہی ظہیر،وسیم عباس،اور وسیم یوسف،حق نواز نے کا ٹیوٹا کرولا کار نمبر LEH 3879 دس لاکھ پچیس ہزار میں خریدی اورایک لاکھ اسی ہزار نقد دیکر باقی 845000 روپے کا ادھار کیا مگر بعد میں رقم دینے سے انکار کر دیا جس پر محمد ایوب نے تھانہ صدر بھائی پھیرو میں مقدمہ نمبر 33/20 بجرم 406 ت پ درج کرایا جس کی تفتیش کے سلسلے میں مدعی جمبر چوکی گیا مگر ایک پولیس ٹاوٹ یاسین کے کہنے پر پولیس نے مدعی کو دھکے دیکر بھگا دیا

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker