تازہ ترینعلاقائی

حکومت کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز کو دیوالیہ ہونے سے بچائے،شبیر ہاشمی

لاہور(پاک نیوز)حکومت کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز کو دیوالیہ ہونے سے بچانے کے لیے جامع پالیسی مرتب کرے میاں شبیر احمد ہاشمی مرکزی صدر و ڈاکٹر ندیم آصف چوہدری مرکزی ترجمانمرکزی عہدیداران آل پاکستان پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشنAPPSA نے مشترکہ بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز کو اور بھاری فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز کو ایک ہی پالیسی پر چلا رہی ہے جو کہ سراسر زیادتی ہے تقریباً 90 فیصد بچے کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز میں تعلیم حاصل کرتے ہیں وہاں پڑھنے والے بچوں کے والدین غریب ہیں یا انتہائی متوسط طبقے سے تعلق رکھتے ہیں یہ والدین سکول والوں کو اسی صورت فیس ادا کرتے ہیں جب ان کے بچے سکول جاتے ہیں اگر کسی بھی وجہ سے لمبی چھٹیاں ہو جائیں تو یہ والدین فیس ادا نہیں کرتے۔اور دوسری اہم بات کہ تعلیمی سال ختم ہونے پر چھٹیاں ہو گئیں اور نئی کلاسز کا اجراء بھی نا ہوسکا اب تو ایسے سکولز میں والدین فیس ادا نہیں کریں گے۔اگر اللہ تعالیٰ رحم کرے اور کرونا کا مسئلہ 5اپریل تک حل ہو جائے تو دیگر اداروں کی طرح نئی کلاسز اور نئے داخلوں کی اجازت دی جائے ورنہ تمام سکولز کا دیوالیہ نکل جائے گا یا صرف تین گھنٹوں کے لیے کلاسز لگانے کی اجازت دی جانی چاہیے۔حکومت کم فیس وصول کرنے والے پرائیویٹ سکولوں کے نمائندگان سے مشاورت کرکے نئی پالیسی کا اعلان کرے اور کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز اگر چھٹیوں کی آدھی فیس لیں گے تو ان کی بلڈنگ کے کرائے،سٹاف کی تنخواہیں اور بلز ہی پوری نہیں ہوں گے حکومت کم فیس لینے والے پرائیویٹ سکولز کو ریلیف فراہم کرے اور موجودہ پالیسی پر نظر ثانی کرتے ہوئے پرائیویٹ سکولز ایسوسی ایشن کے نمائندگان سے ملکر نئی پالیسی مرتب کرے

یہ بھی پڑھیں  ملک میں سیاسی اصلاح کا تشنہ خواب

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker