پاکستانتازہ ترین

سپریم کورٹ کا تفتان، چمن اور طورخم بارڈر پر فوری قرنطینہ سنٹرز بنانے کا حکم

اسلام آباد(پاک نیوز) ملک میں کورونا وائرس کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر سپریم کورٹ نے تفتان، چمن اور طورخم بارڈر پر فوری قرنطینہ سنٹرز بنانے کا حکم دیدیا ہے۔تفصیل کے مطابق سپریم کورٹ میں کورونا وائرس سے متعلق کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس گلزار احمد کا کہنا تھا کہ وبا سے لڑنے کیلئے ہنگامی قانون سازی کی ضرورت ہے۔ یہ وبا بارڈز اور داخلی راستوں سے آئی۔ حکومت ان داخلی راستوں پر کورنٹین سنٹر بنانے میں ناکام رہی۔چیف جسٹس نے تفتان، چمن اور طورخم بارڈر پر فوری قرنطینہ سنٹرز بنانے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ وہاں پر ہزار لوگوں کی گنجائش رکھی جائے جبکہ انفرادی رہائش، واٹر سپلائی، صاف ٹوائلٹس، ایمرجنسی میڈیکل سینٹرز اور لوگوں کیلئے خوراک کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔عدالت عالیہ نے حکومت کو ایک ماہ میں قرنطینہ سینٹرز بنانے اور مکمل فعال کرنے کا حکم دیتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت عدالت میں پیشرفت رپورٹ جمع کرائے۔ اگر عدالتی حکم پر عمل نہ کیا گیا تو توہین عدالت کی کارروائی کی جائے گی۔ادھر کورونا کے باعث انڈر ٹرائل قیدیوں کی رہائی کے معاملے پر سپریم کورٹ نے ہائیکورٹ کا فیصلہ کالعدم قرار دیتے ہوئے رہا کئے گئے قیدیوں کو دوبارہ گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ہے۔ سپریم کورٹ نے سنگین جرائم نیب اور منشیات کے مقدمہ میں دی گئی ضمانتیں منسوخ کر دیں، سپریم کورٹ نے قیدیوں کی رہائی سے متعلق ہائیکورٹس کے احکامات کو بھی کالعدم قرار دے دیا، سپریم کورٹ نے اٹارنی جنرل کی تجاویز منظور کرلیں۔

یہ بھی پڑھیں  داؤدخیل:ماڑی شہرمیں چند ماہ قبل تعمیرہونےوالی سڑک ناقص مٹریل کی وجہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker