تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو۔آزادباردانہ پالیسی خوش آئند ہے،چوہدری نثار ایڈوکیٹ

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔آزادباردانہ پالیسی خوش آئند ہے مگر گندم پرچیزنگ سنٹروں پر ابھی تک باردانہ تقسیم نہ کرکے کسانوں کی حوصلہ شکنی کرکے اور گندم کی نقل وحرکت پر پابندیاں لگا کر کاشتکاروں کو پھر آٹا مافیا کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا گیا۔ آٹا مافیا پھر کسانوں اور عوام کو اربوں کا ٹیکہ لگائے گا۔ ان خیالات کا اظہارکسان بورڈ پاکستان کے صدر چوہدری نثار احمد ایڈووکیٹ نے گزشتہ روزبھائی پھیروکے کسانوں کے وفدسے گفتگو کرتے کیا۔کسان بورڈ کے میڈیا سیکرٹری حاجی محمد رمضان کی قیادت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کرتے کہا چوہدری نثار نے کہاکہ شدید بارشوں،ژالہ باری اور ٹڈی دل کے حملے سے گندم کی پیداوار میں شدید کمی ہوگی۔آزادباردانہ پالیسی خوش آئند ہے مگر گندم پرچیزنگ سنٹروں پر انھی تک باردانہ کا اجرا نہ کرکے کسانوں کی حوصلہ شکنی کی جا رہی ہے ور گندم کی نقل وحرکت پر پابندیاں لگا کر کاشتکاروں کو پھر آٹا مافیا کے رحم وکرم پر چھوڑ دیا گیاہے۔گندم کے کم پیداوار کے علاقوں میں لوگ بھوکوں مریں گے جبکہ آٹا مافیا پھر کسانوں کو اربوں کا ٹیکہ لگائے گا ۔انہوں وارننگ دی کہ آئندہ سال نہ صرف زرعی معیشت بلکہ ساری معیشت کا بھٹہ بیٹھ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ پرچیزنگ سنٹروں پر کسانوں کی حوصلہ شکنی کی جارہی ہے اور ساتھ ہی گندم کی نقل وحرکت پر بین الصوبائی اور بین الاضلاعی پا بندی لگا کر دوبارہ کسانوں کو آٹا مافیا کے سامنے سجدہ ریز ہونے کیلیے چھوڑ دیا گیا ہے۔اس پابندی سے ملک کے ان صوبوں اور ضلعوں جہاں گندم کی کم پیداوار ہو تی ہے وہاں گندم نہ پہنچنے سے سے آٹے کا بحران شدید تر ہو گا اور آٹا مافیا غریب کسانوں اور عوام کو اربوں کا ٹیکہ لگا ئے گا۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ گندم کی قیمت پندرہ سو روپے فی من مقرر کرکے گندم کی نقل و حرکت پر تمام پا بندیاں فوری ختم کی جائیں،فوری طورپر باردانہ کا اجرا کیا جائے اور پابندیاں لگا کر غریب کسانوں اور عوام کو دوبارہ پھر آٹا مافیا سے لٹنے سے بچایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں  بدین: ای ڈی او محکمہ تعلیم بدین پوسٹنگ آرڈر نہیں دے رہا

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker