تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:پاکستان کی حکومت کا اعلان کردہ زرعی پیکیچ سے کسان مطمئن نہیں،نثار احمد

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔پاکستان کی حکومت کا اعلان کردہ زرعی پیکیچ سے کسان مطمئن نہیں۔کھاد پردی گئی سب سڈی میں کسانوں کو سکریچ کارڈ کے چکر میں ڈالنے کی بجائے کھاد کی قیمت کم کی جائے۔گندم کی خریدو فروخت پر بلاجواز اور ظالمانہ پابندیاں لگا کر کسانوں کو ہراساں کرنے کا سلسلہ بند ہونا چاہیے۔ان خیالات کا اظہار علاقے بھر کے کسانوں کے ایک اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کسان بورڈ پاکستان کے مرکزی صدر چوہدری نثار احمد نے کیا انہوں نے حکومت کے حالیہ زرعی پیکیج کو مسترد کر دیا ہے۔ اجلاس میں سیکرٹری جنرل چوہدری شوکت علی چدھڑ،مرکزی سیکرٹری اطلاعات حاجی محمد رمضان اور دیگر نے شرکت کی۔چوہدری نثار نے خطاب کرتے کہا کہ حکومت کا اعلان کردہ زرعی پیکیچ کروڑوں کسانوں سے مزاق اور فراڈ ہے۔کھاد پر دی گئی سب سڈی میں کسانوں کو سکریچ کارڈ کے چکر میں ڈالنے کی بجائے کھاد کی قیمت کم کی جائے۔گزشتہ سال کے سکریچ کارڈوں کے کروڑوں روپے ابھی تک کسانوں کو نہیں ملے اور پتہ نہیں یہ کروڑوں روپے کس کی جیب میں گئے۔انہوں نے گندم کی خریدو فروخت پر بلاجواز اور ظالمانہ پابندیاں لگا کر کسانوں کو ہراساں کرنیکی مزمت کرتے ہوئے انتظامیہ کو وارننگ دی کہ وہ کاشتکاروں کو ہراساں کرنے کا سلسلہ فوری بند کر دیں۔انہوں نے مزیدکہا کہ کسانوں کو کھاد پر سب سڈی بزریعہ سکریچ کارڈ دینے کا اعلان کیا گیا ہے جو کہ فراڈ ہے کیونکہ کسانوں کی اکثریت ان پڑھ ھے اس لیے وہ اس رعایت سے فائدہ اٹھانے سے قاصر ہے۔گزشتہ سال کے کروڑوں روپے کے سکریچ کارڈ کسانوں کے پاس ہیں مگر ان پر ادائیگی کا انتظار کر رہے ہیں اور اب پھر کسانوں کو انتظار کی سولی پر لٹکادیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ کسانوں کو کھاد پر براہ راست سب سڈی دی جائے تاکہ وہ جس کھاد ڈیلر سے چاہیں رعایتی کھادخرید سکیں۔انہوں نے مطالبہ کیا کی حکومت کو زرعی پیکیج کسان تنظیموں کے مشورہ سے بنانا چاہیے۔

یہ بھی پڑھیں  پی آئی اے کے تمام اے ٹی آر طیارے گراؤنڈ کرنے کا فیصلہ

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker