پاکستانتازہ ترین

صدارتی ریفرنس: جسٹس قاضی فائز کے وکلاء کا فروغ نسیم کے پیش ہونے پر اعتراض

اسلام آباد(پاک نیوز) جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کے وکلاء نے صدارتی ریفرنس کے معاملے پر  سپریم کورٹ میں آئینی درخواست میں سابق وزیر قانون فروغ نسیم کے بطور وکیل پیش ہونے پر اعتراض کر دیا۔جسٹس قاضی فائز عیسی کی صدارتی ریفرنس کے خلاف آئینی درخواست کی سماعت آج ہو گی۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ فروغ نسیم جسٹس قاضی فائز عیسی سے عداوت رکھتے ہیں، ریفرنس بد نیتی پر مبنی ہے، فروغ نسیم اس میں فریق مقدمہ اور ’مخبر‘ کی حیثیت رکھتے ہیں، سابق وزیر قانون کا کیس میں بطور وکیل پیش ہونا بار پریکٹیشنر ایکٹ کی بھی خلاف ورزی ہے۔درخواست میں کہا گیا ہے کہ آرٹیکل 100کے تحت وفاق کی اٹارنی جنرل آفس نمائندگی کرتا ہے، اٹارنی جنرل آفس میں 145 وکلاء موجود ہیں، کیا اتنا بڑا اسٹاف قابل نہیں اور کیا صرف تنخواہ وصول کرنے کے لیے ہے۔

یہ بھی پڑھیں  حج 2018ء انتظامات۔۔۔!

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker