پاکستانتازہ ترین

حوالدار لالک جان کا آج اکیسواں یوم شہادت آج منایا جارہا ہے،

اسلام آباد(پاک نیوز)حوالدار لالک جان کا آج اکیسواں یوم شہادت آج منایا جارہا ہے،قوم کا وہ بہادر سپوت جس نے کارگل جنگ میں دشمن کو ناکوں چنے چبوائے اور پے در پے دشمن کے کئی حملے ناکام بنائے۔گلگت کے علاقے غذرکے گاؤں یاسین کا بتیس سالہ نوجوان لالک جان ہیڈ کوارٹرز میں تعینات ہے، یہ جوان مئی انیس سو ننانوے میں دُشمن کی جانب سے کارگل میں ایک بڑے زمینی حملے کی تیاری کی اطلاعات پراگلے موچوں پرلڑنے کے لئے اپنی خدمات پیش کرتا ہے، اورپھراس نے ایک انتہائی دشوارگزار پہاڑی چوکی پر دُشمن سے نبرد آزما ہونے کے لئے کمر باندھی۔جون انیس سو ننانوے کے آخری ہفتے اوررات کے اندھیرے میں دُشمن کی ایک بٹالین کی نفری نے حوالدارلالک جان کی چوکی پرحملہ کیا لیکن حوالدارلالک جان اپنی جان کی پرواہ کئے بغیر مختلف پوزیشنوں سے دُشمن پر فائر کرتے اور ہرمورچے میں جاکرجوانوں کا حوصلہ بڑھاتے رہے۔رات بھر کی لڑائی کے بعد صبح کی روشنی میں دُشمن لاشوں کے انبارچھوڑ کر فرار ہوا لیکن مکاردشمن مزید کمک لے کرپلٹا، اگلے روزرات بھرتوپ خانہ کی فائرنگ اور دن میں بھاری نفری سے حملہ کیا۔لالک جان زخمی ہوئے مگرڈٹے رہے، کمپنی کمانڈر کے سمجھانے کے باوجود مقابلہ جاری رکھااوربالآخر دشمن کو ایک بار پھر پسپا کردیا لیکن اس کے ساتھ ہی اپنے زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے اپنی جان جان آفرین کے سپرد کر دی۔قادرپوسٹ آج بھی نازاں ہے کہ اُسے لالک جان جیسا بہادرسپوت مِلا، وادی غذر جِسے وادی شہداء بھی کہا جاتا ہے، لالک جان کے قصیدوں سے بھری پڑی ہے، قربانی کی لازوال داستان رقم کرنے پرحکومت پاکستان نے حوالدارلالک جان کونشان حیدر سے نوازا۔

یہ بھی پڑھیے :

What is your opinion on this news?

Back to top button
Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker