تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:شادی ہال دوبارہ بند ہونے پر شادی ہالوں پر لگے کروڑوں روپے داو پر لگ گئے

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔شادی ہال دوبارہ بند کرنے کی خبروں پر شادی ہالوں پر لگے کروڑوں روپے داو پر لگ گئے۔لاکھوں لوگوں کا روزگار بھی داو پر لگ گیا۔عمران خاں اور پی ڈی اے کے جلسوں میں شامل لاکھوں لوگوں کو کیا کرونا نہیں لگتا؟صرف شادی ہالوں میں ہی کرونا کا خطرہ ہے؟شادی ہال ایسوسی ایشن کے رہنماوں کا سوال۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز حکومت کی طرف سے شادی ہال دوبارہ بند کرنے کی خبروں پر شادی ہال کے مالکان اور اس صنعت سے وابستہ لاکھوں لوگوں میں تشویش کی لہر دوڑ گئی۔شادہ ہال ایسوسی ایشن کے رہنما ملک محمد اکرام بوٹا نے یہاں صحافیوں سے گفتگو کرتے ان خبروں پر سخت رد عمل کا اظہار کرتے کہا کہ اب بازار،تجارتی مراکز،ٹرانسپورٹ،جہاز، سکول،کالج،دفاتر ریلوے،ہوائی جہاز سب کچھ کھل چکے ہیں مگر شادی ہالوں پر دوبارہ پابندی لگانے کی خبریں تشویش ناک ہیں اور اس سے اس صنعت اور شادی ہالوں پر لگے کروڑوں روپے داو پر لگ گئے ہیں اور پہلے ہی شادی ہال بند ہونے سے مالکان فاقہ کشی کا شکار ہو چکے ہیں۔انہوں نے حکمرانوں سے سوال کیا کہ آج کل عمران خاں اور پی ڈی اے کے جلسوں میں لاکھوں لوگ بغیر ایس او پی کی پابندی کے شامل ہوتے ہیں کیا ان کی وجہ سے کرونا پھیلنے کا خطرہ نہیں؟انہوں نے کہا شادی ہال بند ہونے سے اس صنعت سے وابستہ لاکھوں لوگوں کا روزگار بھی بند جائے گا اور یہ لوگ بے روزگار ہو جائیں گے۔شادی کی صنعت سے متعلقہ محنت کش باورچی،ویٹر،بینڈ باجوں والے،گاڑیاں سجانے والے،کاروں کے ڈرائیور،جنرل سٹوروں والے،کپڑے والے،فرنیچر والے،درزی،ٹینٹ سروس والے،مانگنے والے فقیروں، ہیجڑوں،سنگروں،نقلیں اتارنے والے اور دیگر شادی کی صنعت سے متعلقہ لاکھوں لوگ بے روزگار ہو کر فاقوں کا شکار ہو ہو جائیں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت نے کروڑ لوگوں کو روزگار اور نوکریاں دینے کا وعدہ کیا تھا مگر اب شادی ہال بند ہونے سے لاکھوں لوگ بے روز گار ہو جائیں گے۔اس موقع پر موجود شادی ہال کے مالکان اور اس صنعت سے وابستہ محنت کشوں نے دھمکی دی کہ اگر شادی ہالوں پر پابندی لگائی گئی تو وہ اسلام آباد جا کر بنی گالا کے سامنے دھرنا دیں گے احتجاج کریں گے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button