پاکستانتازہ ترین

نگران وزیراعظم بننے کی پیش کش ہوئی تو قبول کرلوں گا، ڈاکٹرعبدالقدیر

dr. qadeerلاہور(ڈیسک رپورٹر)  پاکستان میں ایٹم بم کے خالق ممتاز سائنس دان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے کہا ہے کہ ملکی مسائل کا حل ایٹم بننے سے زیادہ مشکل نہیں،نگران وزیراعظم بننے کی پیش کش ہوئی تو قبول کرلوں گا۔ انہوں نے کہا نااہلی اور رشوت ستانی کی وجہ سے ملک ترقی نہیں کر رہا۔ انہوں نے کہا کہ کوئی ایک پارٹی نہیں سب کے ساتھ مل کر کام کرنے کو تیار ہوں۔ جب ان سے سوال کیا گیا کہ الطاف حسین آپ کے بارے میں اچھی رائے رکھتے ہیں کیا آپ ان جماعت میں شمولیت کیوں نہیں اخیتار کرلیتے جس کے جواب میں ڈاکٹر قدیر نے کہا کہ ایم کیو ایم متوسط طبقے کی جماعت ہونے کے باوجود اس کی شہرت بری ہے، لوگ اسے بھتہ خور اور پرتشدد سرگرمیوں کے حوالے سے جانتے ہیں، میں ایم کیوایم کے رہنماؤں سے ملاقات میں بھی اس بات کا ذکر کرچکا ہوں۔ ان کا کہنا تھا کہ میں نہیں چاہتا ہے کہ ایم کیوایم میں شامل ہو کر اپنی شناخت داغ دار کروں۔ ڈاکٹر قدیر نے کہا کہ بلوچوں کو احساس محرومی سے نکالا جائے جب کہ نئے صوبے اتفاق رائے سے بننے چاہئیں۔ ان کا کہنا تھا کہ طاہر القادری غیرملکی ہیں انہیں احتجاج کا حق نہیں،انہوں نے منہاج القرآن انٹرنیشنل کے لانگ مارچ کو بھی شرارت قرار دیا۔ ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے کہا کہ ملک کو کالا باغ ڈیم کی ضرورت ہےتاہم اس حوالے سے عوام کو پہلے یہ بتانا چاہیے کہ کالاباغ ڈیم سے ان کے مفادات متاثر نہیں ہوں گے۔

یہ بھی پڑھیں  راولپنڈی: مسافروں سے زائد کرایہ وصول کرنے والی گاڑیوں کیخلا ف گرینڈ آپریشن

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker