تازہ ترینعلاقائی

پھولنگر:کروڑوں روپے سے بنی پٹرولنگ پولیس کی عمارت فنکشل نہ ہو سکی

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔دو سال گزرنے کے باوجودکروڑوں روپے سے بنی پٹرولنگ پولیس کی عمارت فنکشل نہ ہو سکی۔شوردزدہ جھاڑ جھنکار سے اٹی عمارت چوروں،ڈاکووں،منشیات نوشوں،جوئے بازوں کیلیے محفوظ پناہ گاہ بن گئی۔عوامی سماجی حلقوں کی طرف سے چوکی میں ملازمین تعینات کرکے اسے عوام کیلیے تحفظ فراہم کرنے کا ذریعہ بنانے کا مطالبہ۔تفصیلات کے مطابق نواحی گاوں روڈے میں سوا دو کروڑ روپے سے پٹرولنگ پولیس کی چوکی کی حسین و جمیل عمارت کو مکمل ہوئے دو سال سے زائد کا عرصہ بیت چکا ہے مگر محکمہ پولیس کی بے حسی سے اس عمارت میں عملہ کی تعیناتی نہ ہونے سے یہ عمارت شور زدہ ہو کر خستہ حال ہونے لگی ہے اور اس کے صحن میں اگے جھاڑ جھنکار کی وجہ سے بھوت بنگلہ کا منظر پیش کر رہی ہے۔ جس عمارت کو عوام کی جان و مال کا تحفظ کرنے کا زریعہ بنا چاہیے تھا وہ عمارت چوروں،ڈاکووں،منشیات نوشوں،جوئے بازوں اورعشق بازوں اور زانیوں کیلیے محفوظ پناہ گاہ بن گئی۔دن کے وقت اس عمارت میں تاش اورپانسے پر جوا کھیلنے والے اور منشیات نوشی کرنے والے قبضہ جما لیتے ہیں اور مختلف کمروں میں سر عام جوا کھیلنے اور منشیات نوشی کی محفلیں جماتے ہیں جبکہ رات کے وقت اس عمارت میں چور،ڈاکو اور عشق باز سجناں قبضہ جما کر یہاں سے اپنی وارداتیں کرکے عوام کی دولت اور عزتوں کو لوٹتے ہیں۔چونکہ یہ عمارت پٹرولنگ پولیس کے نام سے منسوب ہے اس لیے سرائے مغل پولیس بھی اس عمارت کی تلاشی نہیں لیتی جس وجہ سے یہ عمارت جرائم پیشہ افراد کی جنت بن چکی ہے۔علاقے کے سیاسی و سماجی رہنماوں جماعت اسلامی کے چوہدری رحمت اللہ منہیس،روڈے گاوں کے سماجی رہنماچوہدری عباس شریف،کسان بورڈ کے چوہدری ممتاز اور سابق کونسلر وں نے وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ کروڑوں کی بنی عمارت کو تباہی سے بچایا جائے اور اس میں عملہ تعینات کرکے اسے علاقے کے عوام کی جان و مال کے تحفظ کیلیے استعمال کیا جائے۔

یہ بھی پڑھیں  فقیروالی:ناقص مٹیریل سے تعمیر ہونے والے روڈ پر اعلٰی حکام خاموش

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker