تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:کشمیرمیں انڈین آبی دہشت گردی سے زرعی معیشت تباہ ہو گئی،چوہدری شوکت چدھڑ

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔کشمیرمیں انڈین آبی دہشت گردی سے زرعی معیشت تباہ ہو گئی۔ کسان انڈیا کی آبی دہشت گردی کے خاتمہ اور کشمیر کی آزادی کیلیے پانچ فرووری کو یوم یکجہتی کشمیر جوش و خروش سے حصہ لیں۔ان خیالات کا اظہار کسان بورڈ پاکستان کے صدر چوہدری شوکت علی چدھڑ نے کسان بورڈ کے میڈیا سیکرٹری حاجی محمد رمضان کے ہمراہ میٹ دی پریس پروگرام میں بھائی پھیرو کے صحافیوں سے خطاب کرتے کیا۔انہوں نے کسانوں سے اپیل کی کہ وہ پانچ فروری کو انڈیا کے کشمیر پر قبضہ اور انڈین آبی دہشت گردی کے خلاف یوم یکجہتی کشمیربھرپور طریقے سے منائیں،انہوں نے صحافیوں کے سوالات کا جواب دیتے کہاکہ کشمیرمیں انڈین آبی دہشت گردی سے نہ صرف زرعی معیشت تباہ ہو گئی ہے بلکہ صنعتی اور تجارتی معیشت بھی تباہی سے دوچار ہے۔انہوں نے حکومت پر زور دیاکہ وہ کسانوں کو پانی کی وافر فراہمی کیلیے انڈیا کی آبی دہشت گردی کے خاتمہ کیلیے کشمیر میں جہاد کا اعلان کرے کیونکہ کروڑوں کسان اپنے دریاوں کی حفاظت اور کشمیر کی آزادی کیلیے پاک فوج کے شانہ بشانہ ہونگے۔ کشمیر میں انڈین آبی دہشت گردی،دریاوں پر بند باندھنے سے پاکستان میں نہری پانی پچاس فی صد کم ہو گیا ہے جس سے کھڑی فصلیں تباہ ہو گئی ہیں مویشیوں کیلیے چارہ اور پانی تک دستیاب نہیں اور بہت بڑا انسانی اور حیوانی المیہ جنم لے چکا ہے۔انہوں وارننگ دی کہ انڈین آبی دہشت گردی سے پانی کی کمی سے آئندہ سال نہ صرف زرعی معیشت بلکہ ساری معیشت کا بھٹہ بیٹھ جائے گا۔انہوں نے کہا کہ ملک کی مجموعی قومی پیداوارمیں زراعت کا حصہ 21فیصد ہے۔یہ شعبہ ملک کے 45فیصد لوگوں کے روزگارکا ذریعہ ہے۔ پاکستانی برآمدات سے حاصل ہونے والے زرِ مبادلہ کا 45فیصد زرعی تجارت سے حاصل ہوتا ہے۔بھارت کی طرف سے آبی دہشت گردی کی وجہ سے کسانوں کو پانی کی کمی کا بھی سامنا ہے۔دریاؤں کے پانی پر انڈیا کا کنٹرول ہے۔ انہوں نے کسانوں پر زور دیا کہ اپنے دریاوں کی حفاظت کیلیے اور کشمیر کی آزادی کیلیے پانچ فروری کو گھروں سے باہر نکلیں اور جلسے جلوسوں میں بھرپور حصہ لیکر جماعت اسلامی اور دیگرجماعتوں،تنظیموں اور سرکاری پروگراموں میں بھرپور شرکت کریں۔

یہ بھی پڑھیں  ڈی ایس پی ٹیکسلا سرکل ملک ارشاد کی خصوصی ہدائت پر منشیات فروشوں کے خلاف گرینڈ آپریشن کا آغاز

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker