تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو،سرائے مغل اور گردونواح میں جعلی پیروں اور فحاشی اڈوں کا اضافہ

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو ِ۔بھائی پھیرو،سرائے مغل اور گردونواح میں جعلی پیروں کی بھرمار،پیر خانوں کی آڑ میں منشیات فروشی، قحبہ خانوں اور فحاشی کے اڈوں کا انکشاف۔ اہلیان بھائی پھیرو،سرائے مغل اور گردونواح جعلی پیروں کے خلاف پھٹ پڑے اورجعلی پیروں کے خلاف کتبے اٹھا کر ریلی نکا لی گئی۔ تفصیلات کے مطابق بھائی پھیرو،سرائے مغل اور گردونواح میں روز بروز جعلی پیروں اور فحاشی اڈوں کا اضافہ لمحہ فکریہ بن گیا۔ راکے گھمن کے معززین علاقہ بابا مہر دین انصاری،عمران نمبردار،حافظ محمد ناصر،حاجی محمد بوٹا اور اہل گاؤں کے درجنوں افراد کے علاوہ آس پاس کی آبادیوں کے سینکڑوں لوگوں نے بھی ریلی کی صورت میں فحاشی کے اڈوں کو بند کرنے اور جعلی پیروں کے خلاف کارروائی کے لیے نعرہ بازی کی۔اہل دیہہ نے بتایا کہ محکمہ نیب سے پر زور اپیل کرتے ہیں کہ ان کے خلاف انکوائری کی جائے کہ چند سالوں میں کروڑوں روپوں کی جائیداد کیسے بنائی گئی ہے جبکہ یہ تمام لوگ کوئی کاروبار اور مزدوری نہیں کرتے ہیں۔شریف لوگوں کو دھوکہ دے کر سونا،زیورات،جانور ہتھیا لیتے ہیں اگر کوئی واپسی مانگ لے تو فوراً اپنی عورتوں کے کپڑے پھاڑ کر پولیس کیس بنانا ان کا وطیرا بن چکا ہے۔ریلی میں شریک لوگوں نے مزیدبتایا کہ جعلی پیری مریدی اور علاج معالجہ کی آڑ میں نہ صرف فحاشی کے اڈے چلائے جارہے ہیں بلکہ دم درودکروانے کے لیے آنے والی عورتوں کے ساتھ دست درازی اورزناء باالجبر جیسے واقعات بھی کرچکے ہیں۔عورتوں کے ساتھ آنے والے مردوں کو قریبی قبرستان سے قبروں کی مٹی اور وہاں سے پتھر لانے کے لئے روانہ کردیا جاتا ہے اور اسکے آنے سے قبل ہی حوا کی بیٹیوں کی عزتوں کو نوچ لیا جاتا ہے۔ اور ساتھ نئی نسل کو فحاشی کے اڈوں پر لے جاکر منشیات جیسی لعنت میں پروان چڑھانے میں کوئی کسر نہ اٹھا رکھی ہے اگر کوئی شریف آدمی اس پر قانونی چارہ جوئی کرتا ہے تو اس پر عورتوں کے نازیبا جرائم ڈال کر کاروائی کا کیس بنا لیتے ہیں۔ریلی میں شریک معززین علاقہ نے وزیر اعلیٰ پنجاب،آئی جی پنجاب اور ڈی پی او قصورسے پرزور اپیل کی کہ ان جعلی آستانوں کی آڑمیں، فحاشی کے اڈوں اور منشیات کے دھندے کو بند کروا کر ہماری تباہ ہونے والی نئی نسل کو بچایا جائے

یہ بھی پڑھیں  کراچی: سپرہائی وے کےقریب سے 4 افراد کی لاشیں برآمد

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker