بین الاقوامیتازہ ترین

حجاج کے قافلے مزدلفہ سے منی پہنچ گئے، عیدالاضحی کے پہلے دن رمی کی

مکہ(ڈیسک نیوز)حجاج کے قافلے وقوف عرفہ اور مزدلفہ میں رات گزارنے کے بعد منگل کو نماز فجر کے بعد منی پہنچ گئے اور رمی کی۔ عیدالاضحی کے پہلے دن حجاج سماجی فاصلے کے ساتھ  جمرہ عقبہ (بڑے شیطان ) کی رمی کی پھر مکہ مکرمہ پہنچ کر طواف افاضہ کیا۔ اس کے بعد وہ منی میں اپنا وقت عبادت میں گزاریں گے۔ قبل ازیں حجاج کے قافلے نو ذوالحجہ کو میدان عرفات میں حج کا رکن اعظم وقوف عرفہ ادا کرکے غروب آفتاب کے بعد مزدلفہ پہنچے تھے۔ حجاج کے قافلے سورج غروب ہونے کے بعد نماز مغر ب ادا کیے بغیر میدان عرفات سے مزدلفہ کے لیے روانہ ہوئے۔ حجاج  نے مزدلفہ پہنچ کر مغرب اور عشا کی نمازیں ایک اذان دو اقامت سے سماجی فاصلے کے تحت ادا کیں اور رات کا باقی ماندہ حصہ عبادت میں گزارا مزدلفہ تین بڑے حج مقامات میں سے ایک ہے۔ یہ منی اور عرفات کے درمیان واقع ہے۔حجاج یہاں فجر تک قیام کرتے ہیں اور رمی جمرات (علامتی شیطانوں کو کنکریاں مارنا) کے لیے کنکریاں جمع کرتے ہیں تاہم احتیاطی تدابیر کے پیش نظر حجاج کو سینیٹائز کی گئی کنکریاں فراہم کی گئی ہیں۔ذولحجہ کی بارہ اور تیرہ تار یخ کو تینوں جمعرات کی رمی کریں گے۔ بعض حجاج بارہ ذی لحجہ ہی کو رمی کرکے منی سے رخصت ہو جائیں گے۔جمرات کی رمی جسے عرف عام میں شیطانوں کو کنکریاں مارنا کہا جاتا ہے، حج کے اہم مناسک میں سے ایک ہے۔

یہ بھی پڑھیں  ہارون آباد: زراعت ملکی معشیت میں ریڑھ کی ہڈی کا درجہ رکھتی ہے

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker