تازہ ترینعلاقائی

یکم نومبر سے ملیں نہ اور گنے کا ریٹ 300 روپے فی من نہ کیا تو احتجاج کی کال دیں گے، شوکت چدھڑ

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔حکومت بند کمرے میں خوشامدی کسانوں کو بلا کر شوگر مل مافیا کے حق میں کسان دشمن فیصلے کرنے سے باز رہے وگرنہ سولہ اکتوبر کو شوگر کین کنٹرول بورڈ کی نام نہاد میٹنگ کے خلاف لاہور میں احتجاجی مظاہرہ کریں گے۔ یکم نومبر کو ملیں نہ چلائی گئیں اور گنے کاریٹ تین سو روپے فی من نہ کیا گیا تو ملک بھر میں احتجاج کی کال دیں گے۔ان خیالات کا اظہار کسان بورڈ پاکستان کے صدر چوہدری شوکت علی چدھڑ نے بھائی پھیرو کے نواحی مقام ہیڈ بلوکی کے مقام پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ حکومت بند کمرے میں خوشامدی کسانوں کو بلا کر شوگر مل مافیاکے حق میں کسان دشمن فیصلے کرنے سے باز رہے وگرنہ سولہ اکتوبر کو شوگر کین کنٹرول بورڈ کی نام نہاد میٹنگ کے خلاف لاہور میں احتجاجی مظاہرہ کریں گے۔ یکم نومبر کو ملیں نہ چلائی گئیں اور گنے کاریٹ تین سو روپے فی من نہ کیا گیا تو ملک بھر میں احتجاج کی کال دیں گے۔انہوں نے ایک صحافی کے سوال کے جواب میں بتایا کہ سولہ اکتوبر کو لاہور میں شوگر کین کنٹرول بورڈ کی میٹنگ بلائی گئی ہے جس میں حکومت نے کسانوں کے غیر نمائندہ اور خوشامدی کسانوں کو بلا کر گنے کے کاشتکاروں کے مفادات کے خلاف فیصلے کرنے کا خفیہ پروگرام تشکیل دیا ہے جبکہ حسب سابق اس میں کسان بورڈ پاکستان سمیت دیگر حقیقی کسان تنظیموں کے نمائندوں کو یکسر نظر انداز کیا گیا ہے۔انہوں نے مطالبہ کیا کہ اس نام نہاد شوگر کنٹرول بورڈ کی میٹنگ کو فوری طور پر ملتوی کیا جائے اور کسانوں کی حقیقی نمائندہ تنظیموں کے نمائندوں کو اس بورڈ میں شامل کیا جائے وگرنہ سولہ اکتوبر کو ہم ایوان زراعت کے باہر احتجاجی مظاہرہ کریں گے اور کسان بورڈ کی میٹنگ بلا کر اپنے فیصلے کریں گے۔انہوں نے کہا کہ حکومت گنے کا ریٹ تین سو روپے فی من مقرر کرے اور گنے کا کرشنگ سیزن یکم نومبر سے شروع کرکے شوگر ملوں کا چالو کرائے۔اگر ہمارے مطالبات نہ مانے گئے اور حکومت کی ہٹ دھرمی قائم رہی تو ہم اپنے احتجاج کا دائرہ ملک بھر میں پھیلا دیں گے اور حالات کی زمہ داری حکومت پر ہو گی۔انہوں نے کسان بورڈ کے نمائندوں کو سولہ اکتوبر کو لاہور میں جمع ہو نے کا حکم دے دیا ہے۔چوہدری شوکت نے مزید کہا کہ حکمرانوں کی غلط پالیسوں کی وجہ سے زراعت قریب المرگ ہو چکی ہے، زرعی مداخل بجلی، کھاد، کیڑے مار ادویات اور تیل کی قیمتیں آ سمان کو چھو رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ہمارے مطالبات فوری طور پر مان لے وگرنہ ملک بھر میں دمادم مست قلندر ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں  سکیورٹی گارڈ نے اعجاز چودھری کوعمران خان کے گھر داخل ہونے سے روک دیا۔

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker