تازہ ترینعلاقائی

30 نومبر کو سینکڑوں صحافی پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا دیں گے، عابد مغل

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔آر یو جے کے مرکزی سیکرٹری جنرل عابد مغل اور صدر قصور منیر ساقی کا سرائے مغل آمد پرچئیرمیں حاجی محمد رمضان اور دیگر صحافیوں کی طرف سے والہانہ استقبال۔ حکومت علاقائی صحافیوں کے مسائل حل کرنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر خصوصی اقدامات کرے اورعلاقائی صحافیوں کو نظرانداز کرنے کی روش ترک کرے۔کسی بھی صحافی کے زیادتی ہوئی تو ہم مظلو م صحافی کے ساتھ اور ظالموں کا گریبان پکڑیں گے۔آر یو جے کے رہنماوں کا خطاب۔ ان خیالات کا اظہار ریجنل یونین آف جرنلٹس پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل عابد مغل،، ضلع قصور کے صدر منیر احمد خاں ساقی اور ضلعی چئیر میں حاجی محمد رمضان نے بھائی پھیروپریس کلب کے صحافیوں سے اپنے اپنے خطاب کرتے اپنی اپنی تقریرمیں کیا۔مرکزی سیکرٹری جنرل آر یو جے عابد مغل نے کہا کہ علاقائی صحافی آریوجے کے پلیٹ فارم پر متحد ہوکر اٹھ کھڑے ہوں تاکہ مل جل کر علاقائی صحافیوں کے حقوق کیلئے جدوجہد کی جاسکے۔انہوں نے کہا کہ آریوجے ہر فورم پر علاقائی صحافیوں کے حقوق کے تحفظ اور ان کے مسائل کے حل کیلئے آواز بلند کرے گی۔انہوں نے کہا کہ تیس نومبر کو پنجاب اسمبلی کے سامنے صحافیوں کا دھرنا صحافتی تاریخ میں ایک نیا باب رقم کرے گا اور صحافیوں کے مسائل کے حل کیلیے سنگ میل ثابت ہوگا۔چئیرمیں آر یو جے ضلع قصور حاجی رمضان اور صدر منیر احمد ساقی نے صحافیوں سے خطاب کرتے کہا کہ ہم پہلے بھی شفقت گیلانی،عابد مغل اور تنویر اسلم خاں کی قیادت میں علاقائی صحافیوں کے حقوق کے تحفظ کیلئے سرگرم عمل ہیں اور آئندہ بھی مثبت اور تعمیری صحافت کے فروغ کیلئے اپنا کردار ادا کرتے رہیں گے اور تیس نومبر کو سینکڑوں صحافی پنجاب اسمبلی کے باہر دھرنا دیں گے اور صحافیوں کے حقوق حاصل کئے بغیر چین سے نہیں بیٹھے گی۔اس موقع پرعلاقائی اخبار کے چیف ایڈیٹرعبدالخالق کھوکھر، ظہور احمد ساجد، محمد نعیم سلطان، یاسین یاس،رانا عدنان،سید آصف جمیل نقوی،شعبان چوہدری،شاہ زیب خانزادہ،ملک محمد طیب،رانا حارث او دیگر درجنوں صحافی اور انجمن تاجراں بھائی پھیرو کے جنرل سیکرٹری ملک محمد عثمان بھی موجود تھے۔آخر میں بابائے صحافت حاجی محمد رمضان نے ملکی سلامتی اور نومنتخب عیدیداران کی کامیابی اور استقامت کی دعا کروائی اورصحافیوں نے تیس نومبر کو پنجاب اسمبلی کے دھرنے میں شمولیت کا اعلان کیا۔

یہ بھی پڑھیں  شیخوپورہ بس حادثے میں بچے سمیت تین افراد جاں بحق

یہ بھی پڑھیے :

جواب دیں

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker