تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو پریس کلب کے سال 2022 کے انتخابات مکمل

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔بھائی پھیرو پریس کلب کے سال 2022 کے انتخابات مکمل۔سرپرست اعلی حاجی محمد رمضان،صدر میاں خالد رفیق،جنرل سیکرٹری نعیم سلطان سمیت تمام عہدیدار بلا مقابلہ منتخب۔بے لوث،غیر جانبدارانہ اور جرا ء ت مندانہ صحافت کی ماضی کی روایات کو زندہ رکھیں گے،صحافیوں کے مسائل حل کرنے کیلیے ملک گیر تحریک چلائیں گے اور جابر سلطان کے سامنے کلمہ حق بلند کرکے مظلوموں کی آواز کو حکام بالا تک پہنچائیں گے۔ نو منتخب عہدیداران کاصحافیوں سے خطاب۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روزبھائی پھیرو پریس کلب کے سال 2022 کے انتخابات مکمل ہوگئے۔ انتخابات میں سرپرست حاجی محمد رمضان،صدر میاں خالد رفیق،جنرل سیکرٹری نعیم سلطان سمیت تمام عہدیدار بلا مقابلہ اتفاق رائے سے منتخب ہو گئے، پریس کلب بھائی پھیرو،مانگا اور سرائے مغل کے سرپرست اعلی معروف صحافی حاجی محمد رمضان مسلسل تیسویں بار جبکہ صدر میاں خالد رفیق اور جنرل سیکرٹری نعیم سلطان مسلسل آٹھویں بار بلا مقابلہ منتخب ہو گئے۔دیگرمنتخب ہونے والوں میں سرپرست اعلی حاجی محمد رمضان ،سینئر نائب صدر ظہور احمد ساجد، سینئیر نائب صدر سید آصف جمیل نقوی،نائب صدر ملک بابر شہزاد، نائب صدر خضر فریاد بھٹی، ڈپٹی جنرل سیکرٹری عبدالستارساقی، چئیر مین وارث علی جوئیہ،سینئیروائس چیئرمین میاں امجد رشید،،وائس چئیرمیں زین العابدین، وائس چئیرمین یاسین یاس، انچارج الیکٹرانک میڈیاملک عباس علی،ڈپٹی الیکٹرانک میڈیاشیخ طارق رفیق،،خزانچی میاں محمداسماعیل،ترجمان پریس کلب طارق شاہین، سیکرٹری نشرواشاعت رانا عدنان علی،لیگل ایڈوائزرچوہدری احمد جمال ایڈووکیٹ،سیکرٹری ڈسپلن محمد یوسف ندیم،رابطہ سیکرٹری نعمان خالد، ڈپٹی فنانس سیکرٹری مختار احمد قادری،اور مجلس عاملہ میں وحید شہزاد،عثمان خالد اور خالد محمود شامل ہیں۔ انتخابات کے بعد صحافیوں سے خطاب کرتے نومنتخب عہدیداران نے اپنے اپنے خطاب میں نو منتخب عہدیداران کو مبارکباد دی اور کہا کہ بھائی پھیرو پریس کلب کا قیام 1980 میں عمل میں آیا اور یہ نہ صرف بھائی پھیرو بلکہ اس علاقے کی سب سے پرانی پریس کلب ہے۔ماضی میں اس پریس کلب کے کہنہ مشق صحافیوں حاجی عبدالمجید اور سلیم بٹ نے جراء ت مندانہ اور بیباکانہ صحافت کے درخشاں باب رقم کئے جنکی مثال ملنا مشکل ہے۔آئندہ بھی ہمارے صحافی بے لوث،غیر جانبدارانہ اور دلیرانہ صحافت کی ماضی کی درخشاں روایات کو زندہ رکھیں گے۔عہدیداران نے صحافیوں کو یقین دلایا کہ وہ صحافیوں کے مسائل حل کیلیے بھرپور جدو جہد کرکے ان کے مسائل حل کر کے دم لیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button