تازہ ترینعلاقائی

پھولنگر:چوہدریوں نے تین غریب محنت کش خواتین کو دن دیہاڑے اغوا کر لیا

بھائی پھیرو(نامہ نگار) بھائی پھیرو۔ایک ہی دن میں یہاں کی با اثر برادری کے چوہدریوں نے تین غریب محنت کش خواتین کو دن دیہاڑے اغوا کر لیا۔ایک خاتون سے اوباش چوہدری کی زیادتی۔دو جوان لڑکیاں نہ جانے کہاں اور کس حال میں ہیں؟۔مقدمات درج۔تفصیلات کے مطابق علاقے میں ایک ہی دن تین خواتین کو اغوا کر لیا گیا۔پہلے واقع میں نواحی گاوں تارا گڑھ میں شادی شدہ دو بچوں کی ماں غریب عورت مہوش بی بی اپنے گھر میں کام کاج میں مصروف تھی کہ اسی گاوں کا چوہدری شوکت جٹ اسکے گھر آیا اور اسے بھاری مزدوری دینے کا لالچ دیکر اپنے گھرکی صفائی کرنے کا کہا۔غریب عورت زیادہ مزدوری ملنے کے لالچ میں اپنی شیر خوار بیٹی کو ساتھ لیکر اس کے ساتھ اس کے گھر گئی تو وہاں شیطان صفت چوہدری شوکت جٹ مجبور عورت کو گن پوائینٹ پر ایک کمرے میں لے گیا اور جان سے ماردینے کی دھمکی دیکر زنا بالجبر کرنے لگا۔اوباش نے اسے دھمکی دی کہ اگر اس نے شور مچایا تو وہ اسکی کم سن بیٹی کے ساتھ بھی زیادتی کرکے اسکی زندگی برباد کر دے گا۔کافی دیر شیطان صفت جٹ مجبور عورت سے منہ کالا کرتا رہا اور پھر دھکے دیکر گھر سے نکال دیا۔مظلوم عورت کے بھائی شکیل کی درخواست پر تھانہ پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔دوسرے واقع میں نواحی گاوں رکھوالا المعروف کوٹ اکبر آباد میں محنت کش محمد نواز کھچی کی دو بیٹیاں سترہ سالہ ثانیہ نواز اور سولہ سالہ ندا نواز سودا سلف لینے دوکان کو جا رہی تھیں کہ راستے میں کھڑے گاوں کی با اثر سیاسی برادری کے چوہدریوں کے اوباش ملزمان شبیرجٹ،تنویرجٹ،رفاقت جٹ نے دو نامعلوم ملزمان کے ہمراہ دونوں لڑکیوں کو گن پوائینٹ پر اغوا کر لیا اور کیری ڈبہ میں ڈال کر اغوا کرکے فرار ہو گئے۔مغویوں کے باپ نواز کا کہنا ہے کہ اوباش اسکی بیٹیوں کو حرامکاری کی نیت سے اغوا کرکے نامعلوم مقام پر لے گئے ہیں۔باپ نواز کی درخواست پر تھانہ پولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر دی ہے۔تینوں خواتین کے اغوا میں یہاں کی با اثر برادری کے چوہدریوں کا ملوث ہونا یہاں کے اہل اقتدار کیلیے لمحہ فکریہ ہے۔جبکہ مقامی ایس ایچ او محمد اقبال کا کہنا ہے کہ ملزم چاہے کتنا بھی با اثر کیوں نہ ہووہ قانون کے شکنجے سے بچ نہیں سکے گا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button