تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ شہرمیں تیسرے روز بھی موسلادھار بارش جاری

downloadاوکاڑہ(محمدمظہررشید) اوکاڑہ شہرمیں تیسرے روز بھی موسلادھار بارش جاری رہی جس سے پورا شہر پانی میں ڈوبا رہاتحصیل کونسل ایڈمنسٹریشن پانی کے بروقت نکاس کرنے میں بری طرح ناکام ہو گئی صوبائی وزیر کے گھرسے پانی نکال کر سٹرک پر پھینکا جاتا رہاشہر کے دونوں انڈر پاسوں سے پانی نکال کر ریلوے لائن اور ملحقہ آبادی میں پھینک دیا گیا ہے جبکہ شہری گھروں میں ہی محصور ہو گئے بازاروں میں پانی کا نکاس نہ ہونے سے کسی قسم کا کاروبار نہ ہو سکا بارش کے پانی کی نکاسی کے نام پر ٹی ایم اے کے ارباب اختیار نے لاکھوں روپے کے بل قومی خزانہ سے نکلوانے کی منصوبہ بندی مکمل کرلی گذشتہ تین روز سے اوکاڑہ شہر میں طوفانی اور موسلادھاربارش ہورہی ہے جس سے پورا شہر تیسرے روزبھی پانی میں ڈوبا رہااور شہری گھروں میں ہی محصور رہے جبکہ بعض مساجد میں عشاء کی نمازکیلئے نمازی پہنچ ہی نہیں پائے اور باجماعت نماز ادا ہی نہیں ہوسکی تحصیل کونسل ایڈمنسٹریشن اوکاڑہ کے ارباب اختیار پانی کی بروقت نکاسی میں ناکامی کے باعث ٹی ایم اے کے ریسٹ ہاؤس میں ہی دبکے رہے اور جب بارش کچھ کم ہوئی تو ان ارباب اختیار نے فائربریگیڈ کی فائر گاڑیوں میں بیٹھ کر باری باری اپنے اپنے گھروں کی راہ لی بارش جمعرات کے روز بھی وقفہ قفہ سے جاری رہی بازاروں میں پانی کھڑا رہنے کے باعث کسی قسم کا کاروبار نہ ہو سکاٹی ایم اے کے عملہ نے اوکاڑہ شہر کے دونوں انڈر پاسوں سے واٹر انجن لگا کر پانی ملحقہ آبادی اور ریلوے لائن کے ساتھ بہا دیا ہے جس سے ریلوے لائن کے بہہ جانے کا خدشہ ہے جو کسی بھی وقت کسی بڑے حادثہ کا سبب بن سکتا ہے عوامی حلقوں نے ٹی ایم اے کے ناقص انتظامات اور لاپرواہی کے خلاف زبردست احتجاج کیا ہے اور ذمہ داروں کے خلاف انضباطی کاروائی عمل میں لانے کا مطالبہ کیا ہے

یہ بھی پڑھیں  ہزارہ کے چار اضلاع 550پرائمری اساتذہ مسلسل غیر حاضر

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker