تازہ ترینعلاقائی

پھولنگر:کسانوں کے مسائل حل کرکے ملک کو خوشحال اور خود کفیل بنائیں گے،کسان کانفرنس شرکا

بھائی پھیرو(نامہ نگار)بھائی پھیرو۔کسان بورڈ پاکستان کے زیر اہتمام قومی کسان کانفرنس میں کسان تنظیموں،زرعی سائنسدانوں،زراعت سے متعلقہ تمام سرکاری اور غیر سرکاری سٹیک ہولڈروں کی کثیر تعداد میں شرکت۔تباہ حال زراعت کے مسائل کو افہام تفہیم سے حل کرنے کا عزم۔ زراعت ہماری ملکی معیشت کی ریڑھ کی ہڈی ہے،پیداوار بڑھا کراورکسانوں کے مسائیل حل کرکے ملک کو خوشحال اور خود کفیل بنائیں گے۔شرکا کا عزم۔تفصیلات کے مطابق تمام مقامی صحافیوں کو کسان بورڈ پاکستان کے سیکرٹری اطلاعات حاجی محمد رمضان کے دفتر سے ایک پریس ریلیز جاری کی گئی جس میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ روز لاہور کے ایک نجی ہوٹل میں کسان بورڈ پاکستان کے زیر اہتمام،،قومی کسان کانفرنس کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت مرکزی صدر کسان بورڈ پاکستان چوہدری شوکت علی چدھڑ نے کی اور سٹیج سیکرٹری کے فرائض مرکزی سیکرٹری جنرل سید وقار حسین رضوی نے ادا کیے۔قومی کسان کانفرنس میں ملک بھر کی کسان تنظیموں کے نمائندوں،نامور زرعی سائنسدانوں،زراعت کے تمام سٹیک ہولڈروں،زراعت سے متعلقہ تمام سرکاری و غیر سرکاری تنظیموں کے عہدیداروں اور کسان بورڈ پاکستان کے چاروں صوبوں کے عہدیداروں نے بھرپور شرکت کی۔کانفرنس سے مرکزی صڈر کسان بورڈ پاکستان چوہدری شوکت علی چدھڑ،مرکزی سیکرٹری جنرل سید وقار حسین رضوی،شوگر کین گروورز ایسوسی ایشن کے ملک تیمور حیات خاں نون،نلک سیف اللہ خاں نون،ملک کے نامور صحافی و دانشور مجیب الرحمان شامی،حاجی محمد الیاس علی صدر پاکستان کیٹل فارمرز ویلفیر سوسائٹی،ڈائیکٹر زراعت تعسیؑ پنجاب انجم بٹر،حبیب شہزاد جنرل سیکرٹری شوگر مل ایسوسی ایشن،چوہدری آفتاب علی اینگرو فرٹیلائزر ہیڈ،چوہدری نصرت طاہر صدر پولٹری ایسوسی ایشن،صدر کسان بورڈ کے پی کے رضوان اللہ مہمند،صدر کسان بورڈپنجاب وسطی میاں رشید منہالہ،صدرکسان بورڈ شمالی پنجابصوفی محمد ریاض وڑائچ،سیکرٹری صالح محمد رانجھا،نائب صدر پاکستان امان اللہ چٹھہ،مرکزی سیکرٹری اطلاعات کسان بورڈ حاجی محمد رمضان اور دیگر ماہرین زراعت نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے کسان بورڈ پاکستان کے مرکزی صدر چوہدری شوکت علی چدھڑ اور سیکرٹری جنرل سید وقار حسین رضوی نے کہازرعی مداخل کھاد،بجلی،زرعی ادویات اور دیگر زرعی مداخل کی ہوش ربا مہنگائی اور زراعت سے متعلقہ تمام سٹیک ہو لڈروں کی آپس میں غلط فہمیوں اور رسہ کشی کی وجہ سے زراعت کے مسائل سالہا سال سے حل طلب ہیں اور زراعت پیشہ افراد گوناگوں مسائیل میں گھرے ہیں۔کسان بورڈ پاکستان نے زراعت سے متعلقہ تمام سٹیک ہولڈروں اور سرکاری اور غیر سرکاری تنظیموں کو ایک چھت تلے اکٹھے کرکے ملکی تاریخ میں ایک انقلابی قدم اٹھایا ہے۔انشا ء اللہ ہم ایک دوسری کی مشکلات اور مسائل پر اتفاق رائے کرکے ان کو حکمرانوں سے حل کرائیں گے۔ کسان رہنماوں نے کسانوں کے مسائل تفصیل سے بیان کیے جبکہ سائشدانوں اور زرعی ماہرین نے ان مسائیل کے حل اور زرعی پیداوار کو بڑھانے کیلیے اپنے تجربات پیش کیے اور کہا کہ اگر ہم زراعت کے جدید طریقے استعمال کریں تو ہم نہ صرف اپنے ملک کو خوشحال بنا سکتے ہیں بلکہ دنیا کے ترقی یافتہ ممالک سے آگے نکل سکتے ہیں۔سرکاری اعلی افسران نے یقین دلایا کہ کہ وہ کسانوں کی مشکلات کو اعلی حکام تک پہنچا کر ان کو حل کرانے میں اپنا بھرپور کردار ادا کریں گے۔ سیکرٹری جنرل کسان بورڈ پاکستان سید وقار حسین رضوی نے اعلان کیا کہ ملک بھر کے چاروں صوبوں میں ایسی ہی قومی کسان کانفرنسیں منعقد کرکے زراعت کو منافع بخش بنا کر کسانوں کے تمام مسائل حل کرانے میں اپنی بھرپور جدوجہد جاری رکھیں گے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button