تازہ ترینعلاقائی

سبی:تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف آل گورنمنٹ ٹیچرزایسوسی ایشن کے ملازمین علامتی بھوک ہڑتال

downloadسبی( ارشاد خلجی)تنخواہوں کی بندش اور عدم ادائیگی کے خلاف آل گورنمنٹ ٹیچرز ایسوسی ایشن کے ملازمین علامتی بھوک ہڑتال پر بیٹھ گئے،تفصیلات کے مطابق سبی کے ایک سو سے زائد سینئر اساتذہ کرام کی تنخواہیں گزشتہ دو ماہ سے بند ہیں جس کی وجہ سے اساتذہ اور درجہ چہارم کے ملازمین فاقہ کشی پر مجبور ہو گئے ہیں تاہم تنخواہوں کی بحالی کے سلسلے میں اساتذہ کی تنظیموں کے احتجاجی مظاہرئے گزشتہ کئی ہفتوں سے جاری ہیں احتجاجی مظاہروں کے باوجود تنخواہوں کی عدم فراہمی پر ہفتہ کے دن سے اے جی ٹی اے کے اساتذہ کرام پانچ گھنٹے کی علامتی بھوک ہڑتال پر بیٹھ گئے ہیں علامتی بھوک ہڑتال کرنے والے اساتذہ علی اشرف نودہانی،شیخ عبدالحئی اور خالد پرویز شامل ہیں اس موقع پر آل جی ٹی اے سبی کے صدر جان محمد خجک نے صحافیوں کو بتایا کہ ہمارے چھ ہائی سکعولوں کے اساتذہ اور درجہ چہارم کے ملازمین جن کی تعداد ایک سو سے زیادہ ہے کی تنخواہیں دو ماہ سے بند ہیں جس کی وجہ سے علم کی روشنی پھیلانے والے اساتذہ کے گھروں کے چولہے بجھ چکے ہیں اور وہ فاقہ کشی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں حکام بالا کو بار بار آگاہ کرنے کے باوجود کسی قسم کی شنوائی نہیں ہو پا رہی ہے اور آج سے اساتذہ کرام احتجاجاً علامتی بھوک ہڑتال کررہے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر اساتذہ کی تنخواہیں بحال نہ کی گئیں تو ہم اس سے بھی بڑھ کر احتجاج کا لائحہ عمل مرتب دیں گے جس کی تمام تر ذمہ داری نا اہل ای ڈی او تعلیم اور کرپٹ خزانہ آفیسر پر عائد ہو گی ،انہوں نے وزیر اعلیٰ بلوچستان سے مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ اساتذہ کی تنخواہوں کی بحالی کے احکامات صادر کر کے ملازمین کو فاقہ کشی کی زندگی گزارنے سے بچائیں اور کرپٹ خزانہ آفیسر اور نا اہل ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر کو معطل کرکے معاملے کی از خود تحقیقات کرائیں۔

یہ بھی پڑھیں  بھارت کوسلامتی کونسل میں شکست کا سامنا

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker