تازہ ترینعلاقائی

بھائی پھیرو:غربت سے تنگ ماں نے اپنے دو بچے نہر میں پھینک کرخود بھی چھلانگ لگا دی

phool-negarبھائی پھیرو(نامہ نگار) غربت سے تنگ آ کر ماں نے اپنے دو بچے نہر میں پھینک کر خود بھی چھلانگ لگا دی ۔دو بچے نہر میں ڈوب کر ہلاک۔ دو بچوں نے بھاگ کر جان بچائی ۔ ایک بچے کی لاش مل گئی دوسری بچی بے رحم لہروں کی نذر ہو گئی ۔ماں کو مچھیروں نے جان پر کھیل کر بچا لیا۔پولیس موقع پر پہنچ کر مزید تفتیش کر رہی ہے ۔تفصیلات کے مطابق رکن پورہ چک22 کی رہائشی رانی بی بی زوجہ تاج دین کا خاوند چند ماہ قبل فوت ہو گیاتھا ۔ اور گھر میں فاقے رہنے لگے ۔ غربت سے تنگ آ کر رانی بی بی نے اپنے چار بچے بارہ سالہ عظمیٰ بی بی ، دس سالہ اسد ، آ ٹھ سالہ سعدیہ بی بی اور تین سالہ حیدر کو ساتھ لیااور بس پر سوار ہو کرجمبر کلاں کے نزدیک بی ایس لنک کینال کی نہر پر اُتر ی اور نہر کی پٹڑی پر پانی کے بہاؤ کے ساتھ ساتھ پیدل چلنے لگی ، نہر کے جمبر پل سے تھوڑی دور ویران جگہ پرجا کر رانی بی بی نے اپنی بڑی بیٹی عظمیٰ اور سب سے چھوٹے بیٹے حیدر کو نہر میں پھینک دیا۔بچوں کو نہر میں پھینکتے ہوئے ماں کا ظالمانہ رویہ دیکھ کر دوسرے دو معصوم بچے سعدیہ اور اسدڈر کے مارے بھاگ گئے جبکہ سفاک ماں نے بھی نہر میں چھلانگ لگا دی مچھلیاں پکڑنے والوں نے رانی بی بی کو جان پر کھیل کر بچا لیا جبکہ عظمیٰ اور حیدر ڈوب کر ہلاک ہو گئے حیدر کی نعش تلاش کر لی گئی جبکہ عظمیٰ کی نعش کی تلاش ابھی جاری ہے ۔واقع کا سن کرتھانہ چھانگا مانگا کے ایس ایچ او ملک طارق خاں نفری کے ہمراہ فوراً جائے وقوعہ پر پہنچ گئے اور سفاک ماں رانی بی بی کو حراست میں لے کر اور ہلاک شدہ بچے حیدرکی نعش کو قبضہ میں لے کر مزید قانونی کاروائی شروع کر دی ۔پولیس ذرائع کے مطابق بڑی بیٹی عظمیٰ بی بی کے ڈوبنے کے حالات تا حال مشکوک بتائے جاتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button
error: Content is Protected!!