تازہ ترینعلاقائی

پتوکی:گورنمنٹ ہائی سکول کے ہیڈ ماسٹر نے بچوں کو تعلیم دینے کی بجائے سکول کے کام کروانا شروع کردیئے

pattokiپتوکی(ندیم رضا خاں سے) گورنمنٹ ہائی سکول کے ہیڈ ماسٹر نے بچوں کو تعلیم دینے کی بجائے ا ن سے سکول کے کام کروانا شروع کر دیئے ۔ کلاس روم سے ٹیچر غیر حاضر ۔ ہیڈ ماسٹر نے منتھلیاں لے کر غیر حاضر ٹیچروں کی حاضریاں لگانے لگا۔تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ ہائی سکول پتوکی میں ہیڈ ماسٹر رانا محمد اقبال نے بچوں کو پڑھانے کی بجائے کمروں میں سفیدی ، پینٹ اور صفائیاں کروانے لگا ۔نواحی گاؤں سہجووال چک نمبر11کے رہائشی ملک محمد امین نمبردار نے صحافیوں کو بتلایا کہ ہائی سکول میں ٹیچر کی تعداد تقریباً60کے قریب ہے مگر حاضر صرف 37سے 40ہوتے ہیں بقیہ ٹیچر ہیڈ ماسٹر رانا اقبال کو منتھلیاں دیکر سکو ل سے غائب رہتے ہیں اور ہیڈ ماسٹر ان کی فرضی حاضریاں خود لگاتا ہے ۔جہاں تک کہ دو ٹیچر ز کی ڈیوٹی صرف یہ ہے کہ انہوں نے ہیڈ ماسٹر کے کھانے کا بل ادا کرنا ہوتا ہے سکول میں بچے بے یار و مدد گار ٹولیوں کی شکل میں بیٹھے رہتے ہیں سکو ل میں بچوں کی تعداد تقریباً 1500کے لگ بھگ ہے جن کا مستقبل تباہ و برباد ہورہا ہے ۔ سکول کے کا م کاج اور صفائی ہیڈ ماسٹر بچوں سے کرواتا ہے اور انکے لاکھوں کے بل نکلوا کر خود ہڑپ کر جاتا ہے ملک امین نمبردار اور بچوں کے والدین نے اعلیٰ حکام سے پرزور اپیل کی ہے کہ ایسے کرپٹ ہیڈماسٹر کو فوری طور پر فارغ کر کے کوئی ایماندار ہیڈماسٹر تعینات کیا جائے تاکہ بچوں کا مستقبل تاریک ہونے سے بچ سکے اس بابت جب سکول کے ہیڈ ماسٹر رانا اقبال سے بات کی گئی تو اس نے کہا کہ بیٹھ کر بھائیوں کی طرح باتیں کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button