پاکستانتازہ ترین

ڈرون حملے عالمی قوانین کیخلاف ہیں، بند کئے جائیں، نواز شریف

nawaz in G. Assemblyنیویارک(نمائندہ خصوصی) وزیراعظم نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان کے قبائلی علاقوں میں مسلح امریکی ڈرون حملے نہ صرف پاکستان کی خود مختاری اورسالمیت کے خلاف ہیں  بلکہ یہ عالمی قوانین کی بھی خلاف ورزی ہیں۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ وہ اس وقت اسمبلی سے خطاب کر رہے ہیں جب پاکستان میں ایک اور ڈرون حملہ ہوا ہے۔ انہوں نے ڈرون حملوں کو پاکستان کی خودمختاری اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان مسلح ڈرون حملوں کے استعمال کے انتہائی خلاف ہے کیونکہ ڈرون حملوں میں معصوم افراد بھی نشانہ بنتے ہیں، دہشت گردی کے خلاف جنگ بین الاقوامی قوانین کے تحت لڑی جانی چاہیے اور ڈرون حملے فوری طور پربند ہونے چاہییں۔ وزیراعظم نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں 40 ہزار سے زاہد قیمتی جانوں اور 8 ہزار سے زائد سیکورٹی اہلکاروں کی قربانی دی ہے، منتخب ہونے کے بعد میرے حکومت نے آل پارٹیز کانفرنس منعقد کی جس میں امن کیلئے شدت پسندوں سے مذاکرات کا فیصلہ کیا گیا تاہم مذاکرات کو کمزوری نہیں سمجھا جانا چاہیے۔ وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان افغان امن کے لیے اقوام متحدہ کی کوششوں اور افغان امن کے لیے ایسے تمام اقدامات کی حمایت کرتاہے جس کی قیادت افغانستان کرے، پاکستان کا نہ تو افغانستان میں کوئی پسندیدہ ہے اور نہ ہی وہاں کے اندرونی معاملات میں کوئی دلچسپی رکھتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں  ریہام خان کوکسی بھی مد میں کوئی رقم ادانہیں کی،جہانگیر ترین

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker