تازہ ترینعلاقائی

اوکاڑہ:دو افراد کے بہیمانہ قتل کا مقدمہ انسداد دہشت گردی ایکٹ کے تحت 22 افراد کیخلاف درج

okaraاوکاڑہ (محمدمظہررشید)اوکاڑہ کے نواحی قصبہ کے بارونق بازار میں دو افراد کے بہیمانہ قتل کا مقدمہ انسداد دہشت گردی ایکٹ اور قتل کی دفعات کے تحت 22 افراد کیخلاف درج کرلیا گیامختلف ڈیروں پر پولیس نے چھاپے مار کر پناہ لئے ہوئے کئی اشتہاریوں کو گرفتارکرلیا ڈی پی او نے صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ بیگناہ افراد کو قتل کرنیوالے ملزمان کسی رعایت کے مستحق نہیں معاشرے کے مختلف طبقات کو ذاتی دشمنیاں ختم کرنے کیلئے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے تفصیلات کے مطابق حجرہ شاہ مقیم کے بازار میں مخالفین کی فائرنگ سے ہلاک ہونیوالے عبدالمناف ڈوگر اور بیگناہ اسلحہ ڈیلر محمد ایاز قریشی کے قتل کا مقدمہ تھانہ حجرہ شاہ مقیم میں سعود ایاز کی مدعیت میں زیر دفعہ 7اے ٹی اے 302,148,149,ت پ کے تحت 16ملزمان محمد علی ،محمد عباس، رشید احمد ،چراغدین،نور احمد بالی،صفدر نذیر عرف نیالا،بشیر احمد ،منیر احمد ،محمد سلیم ،محمدرمضان، رمضان عرف جانی، اسلم عرف اچھی، عاشق عرف پپی،جاوید لڈی عرف لنگڑاوغیرہ کو نامزد اور 6نامعلوم افراد کے خلاف درج کیا گیا ہے جاں بحق ہونیوالے دونوں افراد عبدالمناف اور ایاز قریشی کی نعشوں کو پوسٹمارٹم کے بعد ان کے آبائی قبرستانوں میں سپرد خاک کر دیا گیاپولیس نے ملزمان کی گرفتاری کیلئے مختلف مقامات پر چھاپے مارے وہاں سے متعدد افراد کو حراست میں لیا جن میں اکثریت اشتہاری مجرمان ہے ڈی پی او اوکاڑہ بابر بخت قریشی نے اوکاڑہ کے صحافیوں سے گفتگوکرتے ہوئے کہا کہ بیگناہ انسانوں کو قتل کرنیوالے کسی رعایت کے مستحق نہیں ہیں،دن دیہاڑے بھرے بازار میں اسطرح کی دہشتگردی کسی صورت بھی قابل قبول نہیں انہوں نے کہا کہ معاشرے کے مختلف طبقات کو قتلوں کی پرانی دشمنیوں کے خاتمے کیلئے اپنا کردار ادا کر نا چاہیے قانون تو ہر صورت اپنی ذمہ داری پوری کرے گا قبل ازیں ڈی پی او اوکاڑہ سے انکے عزیز ایاز قریشی کے ناحق قتل پر اوکاڑہ کے مختلف طبقہ ہائے زندگی کے افرادنے اظہار تعزیت بھی کیا جن میں مولانا ظفراللہ قمر لکھوی،حاجی احسان الحق،شہزادانجم انصاری ،جنرل سیکرٹری اوکاڑہ پریس کلب شفیق الرحمن شیخ ودیگر شامل تھے

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button