تازہ ترینعلاقائی

راولپنڈی:ڈینگی سے بچاؤمہم،سرکاری محکموں نےعملی اقدامات کی بجائے تشہیری مہم کا کام شروع کردیا

downloadراولپنڈی (ڈپٹی بیورو چیف )وزیر اعلی پنجاب محمد شہباز شریف کی ڈینگی کیسز کے حوالے سے وارننگ کے بعد مختلف سرکاری محکموں اور غیر سرکاری تنظیموں نے عملی اقدامات کی بجائے سارا زور تشہیری مہم پر لگانا شروع کردیا ہے،مری روڈ سمیت شہر کے اہم چوکوں اور چوراہوں باالخصوص گلیوں اور محلوں میں کروڑوں روپے کے بینرز آویزاں کردئیے گئے ہیں جو کہ قومی دولت کے ضیاع کے مترادف ہے جبکہ دوسری طرف ڈینگی مہم کے نام پر منعقدہ اجلاسوں میں سرکاری افسران اور اہلکاروں کو صبح آٹھ بجے طلب کرلیا جاتا ہے اور رٹی رٹائی تقریروں کے بعد 3 یا 4 بجے شام یہ اجلاس اس بات پر اختتام پذیر ہوتے ہیں کہ اب متاثرہ علاقوں میں جاکرڈینگی کے خاتمے کیلئے کام کریں اسی طرح ڈینگی آگاہی واک کے نام پر فوٹو سیشن بناکرحکومت اور عوام کو بے وقوف بنایا جاتا ہے ،جس کی واضح مثال گزشتہ روز دفتر یونین کونسل(86 ) لکھن میں دیکھنے کو ملی، سابق ممبر کینٹ بورڈ و مسلم لیگی رہنما حاجی ظفر اقبال ،راجہ فیصل،ملک طلعت اعوان،سیکریٹری یونین کونسل مسعود اختر،سابقہ کونسلر چوہدری محمود،سعید نمبردار، اور حاجی اکثر مغل سمیت دیگر نے ایک بینر پکڑ کر دفتر کے احاطہ میں ڈینگی آگاہی واک کے نام پر تصویر بنوائی اور خبر کے ساتھ اخبارات کو جاری کرادی گئی،راولپنڈی کے سیاسی و سماجی حلقوں نے وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف اور وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے مطالبہ کیا ہے کہ ڈینگی سے ہونیوالی اموات کے بعد اس ڈینگی مہم کو مذاق نہ بننے دیا جائے بلکہ فضول خرچی سے بھی اجتناب کی ہدایات جاری کیں جائیں،عوام کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button