پاکستانتازہ ترین

قومی وطن پارٹی کا بھرپورردعمل کا فیصلہ ،عمران خان کے سفارشی خطوط منظرعام پر لانے کا اعلان

watan party پشاور(ڈیسک رپورٹر) قومی وطن پارٹی نے کرپشن کے الزامات پر پارٹی کے دو وزرا سے وزارتین واپس لیے جانے کے بعد تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے سفارشی خطوط اور وزیراعلیٰ پرویز خٹک کی جانب سے دباﺅ ڈال کر غیرقانونی بھرتیاں کروانے کے اقدامات کا پردہ چاک کرنے کا فیصلہ کرلیاہے۔قومی وطن پارٹی کے ذرائع کے مطابق وزراکی برطرفی کا فیصلہ بنی گالہ میں عمران خان نے کیا اور مزید عمل درآمد کے لیے پرویز خٹک کو احکامات بھجوائے۔ وزراءسے عہدے واپس لیے جانے کی خبروں کے بعد وطن پال ہاﺅس حیات آبادمیں ہونیوالے اجلاس میں قومی وطن پارٹی نے فیصلہ کیاکہ کرپشن کے الزامات کا بھرپور جواب دیاجائے گااور تحریک انصاف کے سربراہ کے ہاتھ کے لکھے ہوئے وہ سفارشی خطوط منظر عام پر لائے جائیں گے جن میں قومی وطن پارٹی کے وزرا پرغیرقانونی امور کی انجام دہی پر زور ڈالاگیا۔یہ بھی دعویٰ کیاگیاہے کہ عمران خان نے مبینہ طور پرغیرقانونی لکڑی سے بھرے ٹرکوں کو راستہ دینے کی سفارش کی اورکوہستان و چلاس کے جنگلات میں منظور نظر افرادکو غیرقانونی کٹائی کے لیے فری ہینڈ دینے کا مطالبہ کیا۔ قومی وطن پارٹی کے ذرائع نے بتایاکہ وزیراعلیٰ پرویز خٹک کے دباﺅ پر وزارت محنت و افرادی قوت میں ایک ہفتہ قبل غیرقانونی طورپر بھرتی کیے گئے 160افراد کی فہرست بھی جاری کی جائے گی ۔ٹی وی رپورٹ کے مطابق جوابی ردعمل میں پرویز خٹک کے صاحبزادے کی مبینہ غیرقانونی سرگرمیوں کاپردہ بھی چاک کیاجائیگا،صوبائی حکومت کیخلاف ”چارج شیٹ“ کی تیاری کاکام بھی رات گئے تک جاری رہا ۔سکندر شیرپاﺅ نے کہاکہ ہم نے صوبے کے عوام کے مفاد میں تحریک انصاف کا مشکل وقت میں ساتھ دے کراس کو حکومت بنانے کا موقع فراہم کیا، شروع دن سے ہم نے پوری نیک نیتی کے ساتھ ساتھ دیا اور ساتھ چلنے کے لیے جائز و ناجائزدباﺅ بھی برداشت کیا مگرجس بھونڈے طریقے سے وطن پارٹی کو بدنام کرنے کی سازش تیارکی گئی اس کا بھرپورجواب دیا جائیگا۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button