تازہ ترینعلاقائی

جھنگ:چھ سالا بچی عطائی ڈاکٹرکی غفلت سے جاں بحق

unnamedجھنگ(تحصیل رپورٹر)منڈی شاہ جیونہ میں گزشتہ روز فیاض خان بلوچ جو کہ اپنی 6سالہ بچی نادیہ کو بخار ہونے کی وجہ سے ڈاکٹرعبدالرحمن کی کلینک پر لے آیا تو ڈاکٹرعبدالرحمن نے کہا کہ بچی کوداخل کرنا پڑے گابچی کے والد نے بچی کو داخل کروا دیاڈاکٹر عبدالرحمن نے بچی کے والد سے چار ہزار روپے نقد بطور فیس لے لیئے اور بچی کو محمد وارث کمپوڈر کے سپرد کر کے خودجھنگ چلا گیا کمپوڈر نے بچی کو ڈرپ لگائی اور خود سوگیا،اس دوران بچی کے دل میں گھبراہٹ ہونے لگی بچی نے والدہ کو بتایا تو والدہ نے کمپوڈرکو کہا ،کمپوڈر نے ڈرپ اتار دی اور پھر سو گیا ، بچی کی طبیعت زیادہ خراب ہونے پرتقریباء صبح کے پانچ بجے کے قریب کمپوڈر نے دوبارہ ڈرپ لگائی ،ڈرپ لگانے کے فورن بعد بچی نے اپنی والدہ سے کہا کہ میرے دل کو گھبراہٹ ہو رہی ہے اور مجھے گھر لے جاؤ ،بچی کے والد نے کمپوڈرسے کہا کہ میری بچی کی طبیعت مسلسل خراب ہوتی جارہی ہے ،آپ ڈاکٹر کو بلائیں ڈاکٹر نا ہونے کی وجہ سے کمپوڈر نے کہا کے میں بچی کو بے ہوشی کا انجیکشن لگا دیتا ہوں ۔کمپوڈر مسلسل اپنے تجربات کرتا رہا۔اور بچی چیختی چلاتی ہوئی دم توڑ گئی۔لواحقین نے میڈیا کی ٹیم کو بلا کر اپنا بیان رکارڈ کرایااور کہا کہ ہمارے ساتھ سرا سر زیادتی ہوئی ہے۔لواحقین کا اعلی حکام سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button