شہ سرخیاں
بنیادی صفحہ / پاکستان / سرتاج عزیز کامنہ بند، کے پی کے میں ڈرون حملہ،چھ افراد جانبحق

سرتاج عزیز کامنہ بند، کے پی کے میں ڈرون حملہ،چھ افراد جانبحق

drone attack ہنگو(ڈیسک رپورٹر)وزیراعظم کے مشیر سرتاج عزیز کا بیان دھرے کا دھرا رہ گیا اورفاٹاکے بعد خیبرپختونخواہ کی تحصیل ٹل میں امریکی جاسوس طیارے کے مدرسے پر ڈرون حملے میں تین اساتذہ سمیت چھ طلباءجاں بحق اورپانچ زخمی ہوگئے جس کی پاکستان نے شدید مذمت کرتے ہوئے علاقائی سالمیت اورخودمختاری کے خلاف قراردیا۔مقامی میڈیا کے مطابق امریکی جاسوس طیارے نے پہلی بار ہنگومیں بھی حملہ کیاہے اور جمعرات کی صبح خیبرپختونخواہ کے ضلع ہنگوکی تحصیل ٹل میں مدرسہ دارلعلوم قران کو نشانہ بنایا۔تحصیل ٹل کے علاقے ٹنڈرمیں واقع مدرسے پرڈرون طیارے نے تین میزائل فائر کئے جس سے مدرسے کے تین اساتذہ مولوی احمد جان،گل مرجان اور مولوی حامد اللہ افغانی اور تین طالبعلم جاں بحق جبکہ چھ زخمی ہو گئے جن میں سے ایک طالبعلم زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔ بتایا گیا ہے کہ مولوی احمد جان سراج الدین حقانی کے معاون اور گل مرجان افغان صوبہ پکتیامیں طالبان کے امیرتھے۔حملے کے بعد بھی ہنگو میں ڈرون طیاروں کی پروازیں جاری رہیں جس سے لوگوں میں خوف وہراس پھیل گیا اور امدادی کارروائیوں میں مشکالات کا سامنا رہا۔ ڈی پی او ہنگونے بتایاکہ ڈرون حملے میں حقانی نیٹ ورک سے تعلق رکھنے والے دو اساتذہ مارے گئے ہیں ۔ڈرون حملے کے نتیجے میں مدرسہ مکمل طورپر تباہ ہوگیاہے اور شبہ ظاہرکیاجارہاہے کہ ملبے تلے مزید لاشیں ہوسکتی ہیں۔شمالی وزیرستان کے علاقے سپین ٹل میں بھی ڈرون طیاروں کی نچلی پروازوں کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں ۔دفترخارجہ کے ترجمان نے ہنگومیں ہونیوالے ڈرون حملے کی مذمت کرتے ہوئے کہ یہ حملے پاکستان کی سلامتی اور علاقائی خودمختاری کے خلاف ہیں ۔اُنہوں نے بتایاکہ ڈرون حملے نقصان دہ اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہیں ، وزیراعظم نے دورہ امریکہ کے دوران ڈرون حملوں کا معاملہ اُٹھایاتھا۔صوبائی وزیرصحت شوکت یوسفزئی نے کہاکہ بندوبستی علاقے میں ڈرون حملے سے سنگین خطرات لاحق ہوگئے ہیں ، وفاق بندوبست کرے ورنہ اسلام آبادبھی محفوظ نہیں رہے گا۔قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرخورشید شاہ نے اپنے ردعمل میں حالیہ ڈرون حملہ سرتاج عزیز پر ہواہے ، مشیر کے بیان کے بعد ڈرون حملہ حکومت کیلئے چیلنج ہے ۔اُنہوں نے کہاکہ حکومت سفارتی ذرائع کا درست استعمال نہیں کرپارہی ۔یادرہے کہ گذشتہ روز ہی وزیراعظم کے مشیر برائے قومی سلامتی و خارجہ سرتاج عزیز نے سینٹ کی قائمہ کمیٹی کو بتایاکہ امریکہ نے طالبان سے مذاکرات کے دوران ڈرون حملے نہ کرنے کی یقین دہانی کرادی ہے لیکن طالبان قیادت کو نشانہ بنائے جانے کی وجہ سے مذاکراتی عمل معطل ہے ۔

یہ بھی پڑھیں  زبان کاٹ دی جائے

کوئی تبصرہ نہیں

  1. Sub se pehle yeh madrasah Haqqani Network ka tha jo Afghan hain aur in ki dilon main Pakistan ka koi pyar nahin. Agar Pakistan main kal sel aa jaaye ya zalzala ho jaaye to yeh log bhaag ke Aghanistan wapas jaayenge. Doosra baat yeh ke khabron main aaya hai ke is hamla main poora madrasah nahin balke madrasa ki bees se ek kamra jis main Haqqani ka teen rehnuma mojood the, ura gaya. Aur waise bhee jahan pe hamla hua wahan pe hamara nahin balke shaddat pasandon ki hokoomat chal raha hai.

  2. Sub se pehle yeh madrasah Haqqani Network ka tha jo Afghan hain aur in ki dilon main Pakistan ka koi pyar nahin. Agar Pakistan main kal sel aa jaaye ya zalzala ho jaaye to yeh log bhaag ke Aghanistan wapas jaayenge. Doosra baat yeh ke khabron main aaya hai ke is hamla main poora madrasah nahin balke madrasa ki bees se ek kamra jis main Haqqani ka teen rehnuma mojood the, ura gaya. Aur waise bhee jahan pe hamla hua wahan pe hamara nahin balke shaddat pasandon ki hokoomat chal raha hai.