پاکستانتازہ ترین

سانحہ راولپنڈی کے خلاف مذہبی جماعتوں کا یوم احتجاج،ملک بھرمیں سیکیورٹی ہائی الرٹ

lahore-protestکراچی(پاک نیوز) سانحہ راولپنڈی کے خلاف مذہبی جماعتوں کی جانب سے آج یوم احتجاج منایا جارہا ہے ، ملک کے مختلف شہروں میں ہڑتال اور کاروباری مراکز بند ہیں۔ سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر دارالحکومت اسلام آباد کے ریڈ زون کو کنٹینرز لگا کر مکمل طور پر سیل کردیا گیا۔ سول سیکرٹریٹ اور وزیراعظم ہاؤس جانے والے تمام راستے سیل ہیں جبکہ پارلیمنٹ ہاؤس، الیکشن کمیشن، دفتر خارجہ، وفاقی شرعی عدالت اور سپریم کورٹ جانے والے راستوں کو سیل کر کے سیکیورٹی الرٹ کردی گئی ہے، سپریم کورٹ میں سائلین بھی نہ پہنچ سکے، فیض آباد، آئی ایٹ اورسید پور روڈ پر کنٹینرز لگا دئے گئے۔ اسلام آباد کے بیشتر سرکاری و نجی دفاتر خالی ہیں اسی طرح جڑواں شہروں کے کئی نجی اسکولوں میں چھٹی ہے اور تعطیل نہ کرنے والے اسکولوں میں امن ڈے منایا جارہا ہے۔ ادھرانجمن تاجران راولپنڈی کے مطابق دکانیں اورتجارتی مراکزبندرہیں گے۔ سانحہ کے بعدسے اب تک شہرمیں خوف کی فضا ختم نہیں ہوپارہی اورشہری سہمے ہوئے ہیں۔ پنجاب حکومت کی جانب سے بھی صوبے بھر میں کسی بھی ناخوشگوار واقعہ سے نمٹنے کیلئے بھرپور تیاری کی گئی ہے، وزیراعلی کے احکامات کی روشنی میں لاہور کے داخلی و خارجی راستوں پر سخت چیکنگ کی جارہی ہے جبکہ سیکیورٹی کے لئے 10 ہزار سے زائد اہلکار تعینات کئے گئے ہیں، مساجد، امام بارگاہوں اور اہم مقامات پر پولیس کے دستے تعینات ہیں، پنجاب حکومت نے حساس مساجد اور امام بارگاہوں کے قریب سے گزرنے والے راستوں کو نماز جمعہ کے اوقات کے دوران بند رکھنے کا اعلان کیا ہے۔ ادھر کراچی سمیت اندرون سندھ قانون نافذ کرنے والے ادارے ہائی الرٹ ہیں، مزار قائد سے گرومندر جانے والی سڑکیں کنٹینرز لگا کر سیل کر دی گئیں، تین ہٹی سے نمائش اور لسبیلہ سے گرومندر آنے والی سڑک کو بھی رکاوٹیں کھڑی کر کے بلاک کیا گیا ہے۔ ادھر وکلا کی جانب سے عدالتی کارروائی کا بائیکاٹ کیا جارہا ہے جبکہ پرائیوٹ اسکولز مینجمنٹ ایسوسی ایشن کی جانب سے تمام اسکولز بند رکھے گئے ہیں تاہم مشنری اسکولز میں تدریسی عمل جاری ہے۔ دوسری جانب خیبرپختونخوا سمیت بلوچستان میں بھی سانحہ راولپنڈی کے خلاف احتجاج کے باعث سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں، صوبائی دارالحکومتوں سمیت دونوں صوبوں کے مختلف شہروں میں کسی بھی ناخوشگوار صورتحال سے نمٹنے کے لئے سیکیورٹی فورسز ہائی الرٹ ہیں۔ کوئٹہ میں مکمل شٹر ڈاؤن ہے اور تمام چھوٹی بڑی مارکیٹیں بند ہیں۔ دوسری جانب مجلس وحدت مسلمین نے نماز جمعہ کے بعد عظمت نواسائے رسول اور یوم امن منانے اور ملک بھر کی مساجد کے باہر احتجاجی مظاہروں کا اعلان کیا ہے جبکہ شیعہ علما کونسل کی جانب سے کئے جانے والا احتجاج ملتوی کردیا گیا۔ یاد رہے کہ راولپنڈی میں یوم عاشور کے دن دو گروپوں میں تصادم کے نتیجے میں 9افراد جاں بحق اور50 سے زائد زخمی ہوگئے تھے جس کے دوران شرپسند عناصر نے مسجد، مدرسے سمیت راجا بازار کی مارکیٹ کو بھی آگ لگا دی تھی۔

یہ بھی پڑھیے :

Back to top button